ہوم > اسپشیل اسٹوریز > اگر تم آن لائن ہو ۔۔۔۔یاسمین کنول

اگر تم آن لائن ہو ۔۔۔۔یاسمین کنول

اگر تم آن لائن ہو
تو میری وال پر آو
کبھی دیکھو کہ سب غزلیں
اداسی کا اشارہ ہیں
ذرا پرکھو سبھی نظمیں
بہت خاموش رہتی ہیں
بہت بے رنگ ہیں الفاظ
میرے خواب بے رونق
بہت لائک بھی ملتے ہیں
کمنٹ بھی خوب آتے ہیں
مگر ان میں نہیں ہو تم
تو سارے رنگ پھیکے ہیں
اگر تم آن لائن ہو
تو میری وال پر آو
کوئی دو لفظ کہہ ڈالو
مری تسکین ہو جائے
جو پوری وال پھیکی ہے
ابھی رنگین ہو جائے ___!!۔

یہ بھی دیکھیں

یوسی پی میڈیا سکول کے زیراہتمام ورلڈپریس فریڈم ڈے پر دو روزہ نمائش اختتام پزیر

(لاہور ) یونیورسٹی آف سنٹرل پنجاب سکول آف میڈیا کے زیراہتمام ورلڈپریس فریڈم ڈے کے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *