34

8 بجے کمپیوٹر بند ، اس کے بعد جو کام کرے گا وہ ۔۔شہریوں پر یہ پابندی کیوں عائد کر دی گئی؟ جانیے

سیئول (ویب ڈیسک)جنوبی کوریا کے دارالحکومت سیئول میں حکومت نے ملازمین کو دفتروں سے گھر وقت پر بھیجنے کے لیے ایک نئے اقدام کا اعلان کیا ہے جس میں تمام کمپیوٹر رات 8 بجے بند کرنا ہوں گے۔جنوبی کوریا کے دارالحکومت سیئول میں حکومت نے ملازمین کو دفتروں سے گھر وقت پر
بھیجنے کے لیے ایک نئے اقدام کا اعلان کیا ہے جس میں تمام کمپیوٹر رات 8 بجے بند کرنا ہوں گے۔خبر کے مطابق، حکومت کے ایک ترجمان نے کہاکہ اضافی کام کرنے کی روایت کو ختم کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔خیال رہے کہ جنوبی کوریا کا شمار ان ممالک میں ہوتا ہے جہاں سب سے زیادہ گھنٹے کام لیا جاتا ہے۔جنوبی کوریا میں سرکاری ملازمین اوسطاً سالانہ 2,739 گھنٹے کام کرتے ہیں جو دیگر ترقی یافتہ ممالک کے ملازمین کے مقابلے میں تقریباً 1,000 گھنٹے زیادہ ہے۔کمپیوٹرز بند کرنے کے حوالے سے ترتیب دیے گئے پروگرام میں سیئول بلدیہ آئندہ تین ماہ کے دوران تین مراحل میں اس کا نفاذ کرے گی۔اس پروگرام کا آغاز 30 مارچ سے ہوگا، جس میں تمام کمپیوٹر شب آٹھ بجے بند کر دیے جائیں گے۔اس کا دوسرا حصہ اپریل میں شروع ہوگا، جس میں ملازمین کو مہینے کے دوسرے اور چوتھے ہفتے میں اپنے کمپیوٹر شب ساڑھے سات بجے بند کرنا ہوں گے۔مئی سے یہ پروگرام مکمل طور پر لاگو کر دیا جائے گا جس میں ہر جمعے کو کمپیوٹر شام سات بجے بند کرنا ہوں گے۔ یاد رہے کہ رواں ماہ کے آغاز میں جنوبی کوریا کی قومی اسمبلی نے ہفتے میں 68 گھنٹے سے کم
کرکے 52 گھنٹے کام کرنے کا ایک قانون منظور کیا تھا۔زمین سے محبت کرنے والے آج ارتھ آور (Earth Hour) منا کر اس کا اظہار کریں گے اور غیر ضروری بجلی کے آلات کو ایک گھنٹے کے لیے بند کردیں گے۔پاکستان سمیت 88 ممالک کے 4 ہزار شہر اور قصبے اس مہم میں حصہ لے رہے ہیں تاکہ کرہ ارض کو ماحولیاتی آلودگی سے بچانے کے حوالے سے شعور اجاگر کیا جا سکے۔ارتھ آور کو ورلڈ وائڈ فنڈ (ڈبلیو ڈبلیو ایف) کی جانب سے 2007 میں متعارف کروایا گیا تھا، جس کے بعد اسے ہر سال مارچ کے آخر میں ایک مخصوص دن پر منایا جاتا ہے۔ہر سال دنیا بھر میں ارتھ آور کے دن رات ساڑھے 8 بجے سے لے کر رات ساڑھے 9 بجے تک تمام اضافی فالتو لائٹس اور برقی آلات بند کردیئے جاتے ہیں۔نیوزی لینڈ میں اس دن کی مناسبت سے کینڈل لائٹ ڈنر کیا جاتا ہے اور لائٹس کے بجائے موم بتی اور دیئے جلائے جاتے ہیں۔ارتھ آور کے موقع پر دنیا کی مشہور عمارتوں کی لائٹس بھی بند کردی جاتی ہیں جن میں ایفل ٹاور بھی شامل ہے۔ واضح رہے کہ یہ 11 واں سالانہ ارتھ آور ہے جسے پاکستان سمیت دنیا بھر کے افراد آج منائیں گے۔
یہ بھی ضرور پڑھیں : لاچارمریضوں کی بولتی تصویروں پر”مناظرعلی ” کی رونگٹے کھڑے کرنے والی تحریر

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں