Monday , October 22 2018
ہوم > پاکستان > وہ کونسی وجوہات ہیں جس کی بنا پر مسلم لیگ (ن) گرمیوں میں الیکشن نہیں چاہتی؟ لیگیوں کی ایک اور چالاکی سے پردہ اٹھ گیا

وہ کونسی وجوہات ہیں جس کی بنا پر مسلم لیگ (ن) گرمیوں میں الیکشن نہیں چاہتی؟ لیگیوں کی ایک اور چالاکی سے پردہ اٹھ گیا

لاہور(ویب ڈٰیسک)انتخابات گرمیوں میں کروائیں یا نہیں ،گرمیوں میں الیکشن نہ کروانے کے موقف کی اہم ترین وجہ بھی سامنے آ گئی۔ نواز شریف اور مریم نواز فوری الیکشن کے حق میں ہیں جبکہ شہباز شریف کو خدشہ ہے کہ گرمیوں میں ہونے والی لوڈ شیڈنگ انتخابات پر اثر انداز ہو سکتی ہے۔تفصیلات کے مطابق الیکشن کا وقت قریب آ چکا ہے ۔

اسمبلیوں کی مدت ختم ہونے کو ہے۔ملک کے بڑے اداروں اور سیاسی جماعتوں نے انتخابات کی تیاری شروع کر رکھی ہے۔انتخابات کب انعقاد پذیر ہوں گے یہ ایک اہم سوال بن چکا ہے جس کا جواب تاحال سامنے نہیں آیا۔انتخابات گرمیوں میں کروائیں یا نہیں،،مسلم لیگ ن بھی تقسیم ہو گئی۔۔نواز شریف اور مریم نواز کو اپنے نئے بیانیے پر بہت اعتماد ہے ،انکا ماننا ہے کہ انکا نیا بیانیہ مقبول ہے اور انتخابات میں انکے کام آئے گا اس لیے جتنا جلدی ہو سکے مسلم لیگ ن کو الیکشن کی جانب چلے جانا چاہیے۔دوسری جانب شہباز شریفکا موقف ہے کہ اگرہم وقت پر انتخابات کروائیں تو ووٹر کو شدید گرمی میں الیکشن کا سامن کرنا پڑے گا اور گرمیوں میں ہونے والئلوڈشیڈنگ بری طرح سے مسلم لیگ ن کے خلاف جائے گی۔ دوسری طرف ایک خبر کے مطابق احتساب عدالت نے شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس میں نیب کی جانب سے اضافی دستاویزات عدالتی ریکارڈ پر لانے کی درخواست منظور کرلی گئی۔ احتساب عدالت کے فاضل جج محمد بشیر نے ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت کی تو اس موقع پر نیب کے ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل سردار مظفر عباسی نے اضافی دستاویزات عدالتی ریکارڈ پر لانے اور ڈی جی آپریشنز نیب کو گواہ بنانے کی استدعا کی۔نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ انٹرنیشنل کوآپریشن ونگ نیب کو فلیگ شپ اور ایون فیلڈ ریفرنس سے

متعلق دستاویزات ملی ہیں جو لندن فلیٹس کے رجسٹری ریکارڈ، یوٹیلٹی بلز اور کونسل ٹیکس سے متعلق ہیں۔نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ دستاویزات جے آئی ٹی کے لکھے گئے خط کے جواب میں موصول ہوئی ہیں جب کہ نیب نے جے آئی ٹی کی طرف سے لکھے گئےخط کی پیروی کی۔سردار مظفر عباسی نے عدالت کو مزید بتایا کہ نیب کے ‘یوکے سینٹرل اتھارٹی’ کو خط کا جواب بھی موصول ہوا اور یہ دستاویزات ملزمان کی طرف سے پیش نہیں کی گئیں۔ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب نے کہا کہ ملزمان کی طرف سے ان دستاویزات کو چھپایا گیا اس موقع پر مریم نواز کے وکیل امجد پرویز نے اعتراض اٹھایا کہ رجسٹری ریکارڈ سے متعلق پہلے ہی گواہ پر جرح ہوچکی ہے جب کہ اس سے پہلے نیب نے اضافی شواہد ریکارڈ پر لانے کے لیے ضمنی ریفرنس دائر کیا تھا۔اضافی دستاویزات عدالتی ریکارڈ پر لانے کی درخواست پر مریم نواز کے وکیل امجد پرویز کے دلائل مکمل ہونے پر عدالت نے فیصلہ محفوظ کیا۔عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے نیب کی جانب سے نئی دستاویزات پیش کرنے کی درخواست منظور کرلی جس کے بعد لندن فلیٹس سے متعلق لینڈ رجسٹری، یوٹیلٹی بلز اور ٹیکس اسٹیٹمنٹ انہیں دستاویزات کا حصہ ہوں گی۔عدالت نے ڈی جی آپریشنز نیب ظاہر شاہ کو بطور گواہ پیر کو طلب کرلیا جب کہ فلیگ شپ کی ملکیت سےمتعلقہ دستاویزات بھی عدالت میں پیش کی جائیں گی۔ایون فیلڈ ریفرنس کی مزید سماعت 23 اپریل تک کے لئے ملتوی کردی گئی۔یاد رہے کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں جے آئی ٹی کے گواہ واجد ضیاء پر نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث اور مریم نواز کے وکیل امجد پرویز جرح مکمل کرچکے ہیں۔
یہ بھی ضرورپڑھیں : لاہوریوں کی سنی گئی،،،جلسے جلوسوں سے جان چھڑانےکامنصوبہ۔۔۔تحریر:محمدمناظرعلی

یہ بھی ضرور پڑھیں : جہاں جانوراورانسان ایک ہی تالاب سے پانی پیتے ہیں۔۔۔تحریر:محمدمناظرعلی

یہ بھی دیکھیں

کرپشن کیخلاف مہم جاری لیکن بیرون ملک زیرسماعت ایک ایسے مقدمے میں کرپشن کا انکشاف ہرپاکستانی خون کے آنسو روئے

اسلام آباد(ویب ڈیسک) ملک بھر میں تحریک انصاف نے کرپشن کیخلاف مہم شروع کررکھی ہے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *