Tuesday , December 11 2018
ہوم > پاکستان > مسلم لیگ (ن) کو کمر توڑ جھٹکا، خواجہ آصف کی نااہلی کے بعد آدھی کابینہ فارغ۔۔۔؟ اسلام آباد سے تہلکہ خیز بریکنگ نیوز آگئی

مسلم لیگ (ن) کو کمر توڑ جھٹکا، خواجہ آصف کی نااہلی کے بعد آدھی کابینہ فارغ۔۔۔؟ اسلام آباد سے تہلکہ خیز بریکنگ نیوز آگئی

اسلام آباد( ویب ڈیسک ) شاہد خاقان عباسی کی حکومت بھنور میں پھنس گئی،اسلام آباد ہائیکورٹ نے ایسے کیس کا فیصلہ محفوظ کیا ہے کہ آدھی کابینہ کے فارغ ہونے کا خدشہ ہے۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے خصوصی مشیروں کی تقرری کے خلاف دائر درخواست کے قابل سماعت ہونے

یا ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ کرلیا۔اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے وزیراعظم کے خصوصی مشیروں کی تقرری کے خلاف دائر درخواست کی سماعت کی،درخواست گزار جی ایم چوہدری نے موقف اختیار کیا کہ وزیراعظم کے خصوصی مشیروں کی تقرری قومی خزانے پر بوجھ اور خلاف آئین ہے۔درخواست گزار نے استدعا کی کہ مفتاح اسماعیل، آصف کرمانی، بیرسٹر ظفراللہ، مصدق ملک اور خواجہ ظہیر کی تقرری کو غیر آئینی قرار دیا جائے،وفاق کی جانب سے ڈپٹی اٹارنی جنرل راجا خالد محمود عدالت میں پیش ہوئے اور موقف اپنایا کہ رولز آف بزنس کے تحت وزیراعظم کو اختیار ہے کہ خصوصی مشیروں کا تقرر کریں اور تقرری سے آئین و قانون کی کوئی خلاف ورزی نہیں ہوئی۔ڈپٹی اٹارنی جنرل نے استدعا کی کہ درخواست بدنیتی پر مبنی ہے اس لئے اسے ناقابل سماعت قرار دے کر خارج کیا جائے۔عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد درخواست قابل سماعت ہونے یا نہ ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ کرلیا۔ واضح رہے کہ اس سے قبل خواجہ آصف نااہلی کیس کا اسلام آباد ہائیکورٹ لارجر بینچ نے تحریری فیصلہ جاری کردیا، جسٹس اطہر من اللہ کا تحریر کردہ فیصلہ 35 صفحات پر مشتمل ہے۔تفصیلات کے مطابق عدالت نے خواجہ آصف نااہلی کیس کے ہائیکورٹ کے

فیصلے کی کاپی الیکشن کمیشن اور اسپیکر اسمبلی کو بھیجنے کی ہدایت کردی ہے۔تحریری فیصلے میں کہا گیا ہے کہ خواجہ آصف نے ملازمت کے معاہدے کا اعتراف کیا ہے، وہ این اے 110 اسے الیکشن لڑنے کے اہل نہیں تھے، خواجہ آصف نے غیر ملکی کمپنی سے مختلف اوقات میں 3 کنٹریکٹ کیے تھے۔فیصلے کے مطابق خواجہ آصف 2013 میں الیکشن لڑنے کے اہل نہیں تھے، 2013 میں خواجہ آصف کو دئیے گئے ووٹ کالعدم قرار دے دئیے گئے، ایک نااہل شخص پارلیمنٹ کا حصہ نہیں بن سکتا ہے، پارلیمنٹ کے بجائے فیصلہ عدالت میں ہوگا تو فیصلہ قانون پر ہوگا۔تحریری فیصلے میں کہا گیا ہے کہ بطور وکیل خواجہ آصف جانتے تھے کاغذات نامزدگی کے لیے کیا ضروری ہے، ان کو معلوم تھا کہ کاغذات نامزدگی میں معلومات چھپائی گئیں، کاغذات نامزدگی میں ملازمت ظاہر کرنے کا ایک بھی ثبوت نہیں دیا گیا، دستاویزات سے ثابت ہوا کہ خواجہ آصف نے جان بوجھ کر ملازمت کا معاہدہ چھپایا، انہوں نے اثاثوں میں غیر ملکی بینک اکاؤنٹ ڈکلیئر نہیں کیے۔سپریم کورٹ میں گزشتہ کیسز کے فیصلے کے بھی حوالے دئیے گئے، فیصلے میں عمران خان کے نواز شریف کے خلاف مقدمہ کا حوالہ دیا گیا، پارلیمنٹ عزت و تکریم کی حقدار ہے، سیاسی قوتوں کو تنازعات سیاسی فورم پر حل کرنے چاہئیں،

یہ بھی دیکھیں

افسوسناک خبر : ہسپتال کا معاوضہ ادا نہ کرنے پر بھارت میں معروف پاکستانی شخصیت کو یرغمال بنا لیا گیا، نام جان کر آپ بے چین ہو جائیں گے

لاہور(ویب ڈیسک) غربت اور مجبوری نے معروف پاکستانی شخصیت کو بھارت کے ایک ہسپتال میں …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *