Tuesday , November 13 2018
ہوم > صحت > بچوں میں ذیابیطس۔۔۔۔ مگر اس کا ایک آسان علاج یہ بھی ہے

بچوں میں ذیابیطس۔۔۔۔ مگر اس کا ایک آسان علاج یہ بھی ہے

بچوں میں ذیابیطس۔۔۔۔ مگر اس کا ایک آسان علاج یہ بھی ہے

لاہور (ویب ڈیسک) والدین جاننا چاہتے ہیں کہ انہیں کیسے پتا چلے کہ ان کے بچے کو ذیابیطس ہے۔ اگر آپ کے بچے کو پیاس بہت زیادہ لگتی ہے اور پیشاب بہت زیادہ آتا ہے اور پیشاب پر چیونٹیاں اکٹھی ہو جاتی ہیں تو امکان ہے کہ اسے ذیابیطس ہو گی۔

اس کے لیے باقی علامات میں وزن کم ہونا، پیٹ کا درد اور آہوں کی صورت میں سانس لینا ہیں۔ تشخیص کے لیے خون اور پیشاب کا معائنہ بہت ضروری ہے۔ اور تشخیص کے بعد علاج میں کسی بھی قسم کی سستی انتہائی خطرنا ک بھی ہو سکتی ہے۔ بچپن میں ذیابیطس کی وجہ میٹھے کھانے زیادہ کھانا نہیں ہوتی۔ لیکن اگر آپ بہت موٹے ہیں اور آپ کے خاندان میں کچھ اور لوگوں کو بھی شوگر ہے تو 30 ، 35 سال بعد شوگر ہونے کا بہت خطرہ ہے۔ ذیابیطس کی وجہ سے بچے کو انسولین کے ٹیکے کی ضرورت پڑتی ہے۔دراصل ذیابیطس ٹائپ ون میں یہ لازمی ہوتا ہے۔ انسولین وہ ہارمون ہے جو پِتہ بناتا ہے۔لیکن ذیابیطس کی مذکورہ قسم میں وہ انسولین بنانا چھوڑ دیتا ہے۔ بلوغت کے بعد ہونے والی ذیابیطس میں اگرچہ انسولین کی بھی ضرورت پڑ سکتی ہے لیکن یہ عام طور پر کچھ اور دوائیں یا صرف پرہیزی خوراک ہی سے کنٹرول ہو جاتی ہے۔ بچوں کی ذیابیطس انسولین نہ ہونے کی وجہ سے زیادہ خطرناک اور مشکل سے قابو میں آنے والا مرض ہے اور اس میں پیچیدگیاں پیدا ہونے کے امکانات زیادہ ہیں۔

ٹائپ ون میں دن میں چار یا اس سے زیادہ بار انسولین کے ٹیکے کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔ اسے انسولین پِن کی مدد سے دیا جاتا ہے جو عام ٹیکے سے مختلف ہوتے ہیں۔ بچہ شروع میں ان سے کچھ تکلیف محسوس کر سکتا ہے لیکن بعد میں وہ اس کا عادی ہو جاتا ہے اور اسے کوئی پریشانی نہیں ہوتی۔ وہ بچہ جسے ذیابیطس ہو، اس کے خون میں شکر کی مقدار کو انتہائی سختی سے کنٹرول کرنے کی ضرورت ہوتی ہے۔ یہ طے شدہ بات ہے کہ ذیابیطس کا مریض بچہ اگر خون میں شکر کو انتہائی سختی سے کنٹرول نہیں کرے گا تو بہت ساری پیچیدگیوں کا شدید خطرہ ہو گا۔ ان میں گردوں کا ناکارہ ہو جانا، بینائی کا چلے جانا اور ٹانگوں میں گنگرین ہونا ہے، جس سے ٹانگ کاٹنی پڑ جاتی ہے،شامل ہیں۔ لیکن ذیابیطس کو سختی سے کنٹرول کرنے میں خون میں شکر انتہائی کم ہونے کا بھی خدشہ رہتا ہے جو بذات خود خطرناک ہے اس اس کی وجہ سے غشی کا دورہ پڑ سکتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

انرجی ڈرنکس بچوں کے لیے کس قدر خطرناک اور نقصان دہ ہیں ؟ ماہرین نے خبردار کر دیا

برطانیہ (ویب ڈٰیسک)برطانوی وزیراعظم کا کہنا ہے کہ انگلینڈ میں 18 سال سے کم عمر …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *