ہوم > انٹرنیشنل > نواز شریف کہیں کا نہ رہا ، ممبئی حملوں پر شوشہ چھوڑنے کی ایسی سزا ملے گی شریف خاندان سوچ بھی نہیں سکتا تھا ، مودی اور سجن جندال کے یار کا اصل چہرہ بے نقاب کر دینے والی خبر آ گئی

نواز شریف کہیں کا نہ رہا ، ممبئی حملوں پر شوشہ چھوڑنے کی ایسی سزا ملے گی شریف خاندان سوچ بھی نہیں سکتا تھا ، مودی اور سجن جندال کے یار کا اصل چہرہ بے نقاب کر دینے والی خبر آ گئی

لاہور (ویب ڈیسک ) نواز شریف کے انٹرویو اور بھارتی میڈیا واویلا کے بعد پاکستان کے اہم حلقے نواز شریف سے سخت نالاں ہیں نیوز لیکس رپورٹ کو عام کرنے اور نواز شریف خاندان کے بھارتی اہم افراد کے ساتھ کاروبار ی تعلقات اور ان کی ملاقاتوں کے حوالے سے بھی کئی اہم شواہد

سامنے لانے پر غور شروع ہوگیا نواز شریف نے متنازعہ انٹرویوکس پلاننگ کے تحت دیا اور پاکستان پر عالمی دباؤ ڈلوانے کی سازش میں کون کون شامل ہے اس پراداروں نے کام شرو ع کر دیا ذرائع کے مطابق انٹرویوکو بھارتی اور عالمی میڈیا میں پھلانے کے پیچھے نواز شریف کے وہی قریبی ساتھی ہیں جنہوں نے نیوز لیکس میں بھی اہم کردار ادا کیا تھا بعض ذرائع کے مطابق انٹرویو کے پیچھے محمود اچکزئی اور کئی اہم رہنما شامل ہیں جنہوں نے فیصلہ کیا تھا کہ اب ادارو ں کے ساتھ تصادم کے ساتھ ساتھ باقاعدہ انٹرنیشنل پریشر ڈلوانے کیلئے ایسی گیم کھیلی جائے کہ اداروں کو مجبور ا نواز شریف کے ساتھ ڈیل کرنی پڑے اس ضمن میں باقاعدہ بھاری فنڈنگ کی اور سرکاری ذرائع استعمال کیے گئے ہیں کئی اہم قومی اداروں کے خلاف انتظامات کے حوالے سے نواز شریف نے 3 اہم بھارتی ٹی وی چینلز اور دو بھارتی میڈیا ہاؤس کو انٹرویو دینے کا پروگرام بنا رکھا تھا جس میں باقاعدہ پاکستان کے بھی دو میڈیا ہاوسز کو انوا لوکر رکھا تھا اور یہ انٹرویو لاہور میں ہونا تھے مگر بر وقت پلاننگ کی اطلاع ہونے پر یہ انٹرویو کینسل ہو گئے جس کے بعد نواز شریف کے ایک قریبی ساتھی نےدوسرے طریقہ سے پاکستان کے اہم اداروں کو بدنام کرنے اور پاکستان کے خلاف باقاعدہ انٹر نیشنل سازش کرنے کیلئے نئی پلاننگ کے تحت یہ سب کچھ کیا ذرائع کا کہنا ہے کہ آئندہ چند روز میں ایک مزید نیا انٹرویو بھی لانے کی کوشش کی جارہی ہے یہ انٹرویو وغیرہ ملکی چینلز کو دیا جائے گا اور نواز شریف کے علاوہ بھی (ن) لیگ کے اندر سے دو اور شخصیات بھی پاکستان کے اہم اداروں کے خلاف انٹرنیشنل میڈیا میں زہر اگلنے کا پروگرام بنا رہی ہیں ذرائع کا کہنا ہے پاکستان مخالف انٹرویو کے شائع ہونے اور اس کے انٹرنیشنل میڈیا پر پراپیگنڈہ شروع ہونے سے پہلے اچکزئی کے ساتھ ساتھ ایم کیو ایم اور اے این پی بھی کو اعتماد میں لیا گیا تھا

یہ بھی دیکھیں

افواہیں بے بنیاد: ٹیکساس میں پاکستانی قونصل جنرل کی ڈاکٹرعافیہ سےجیل میں ملاقات

ٹیکساس: امریکی ریاست ٹیکساس میں تعینات پاکستانی قونصل جنرل عائشہ فاروقی کی ڈاکٹر عافیہ صدیقی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *