Monday , December 17 2018
ہوم > پاکستان > نگران وزیراعظم ناصرالملک کی 6 رکنی کابینہ نے حلف اٹھالیا

نگران وزیراعظم ناصرالملک کی 6 رکنی کابینہ نے حلف اٹھالیا

اسلام آباد: نگران وزیراعظم جسٹس (ر) ناصرالملک کی 6 رکنی وفاقی کابینہ نے حلف اٹھالیا۔

ایوان صدر میں صدر مملکت ممنون حسین نے نگران کابینہ سے حلف لیا جب کہ کابینہ میں شامل اراکین میں شمشاد اختر ، عبداللہ حسین ہارون، روشن خورشید برونچا، اعظم خان، سید علی ظفر اور محمد یوسف شیخ شامل ہیں۔

ذرائع کے مطابق ممکنہ طور پر اقوام متحدہ میں پاکستان کے سابق مندوب عبداللہ حسین ہارون کو وزیرخارجہ اور سابق گورنر اسٹیٹ بینک شمشاد اختر کو وزیر خزانہ کا قلمدان دیے جانے کا امکان ہے۔

یاد رہے کہ نگران وزیراعظم جسٹس (ر) ناصرالملک نے یکم جون کو اپنے عہدے کا حلف اٹھایا جو 25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات 2018 کے انعقاد کے پابند ہیں۔

ڈاکٹر شمشاد اختر

نگران وفاقی کابینہ میں شامل ڈاکٹر شمشاد اختر 2006 سے 2009 اسٹیٹ بینک کی گورنر رہیں اور اس سے قبل وہ 2004 میں ایشین ڈویلپمنٹ بینک کی ڈائریکٹر جنرل بھی رہیں۔

ڈاکٹر شمشاد اختر اقوام متحدہ میں انڈر سیکریٹری جنرل رہ چکی ہیں اور وہ سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ بان کی مون کی سینئرمشیر بھی رہی ہیں۔

ڈاکٹرشمشاد اختر ورلڈ بینک کی نائب صدر، اقوام متحدہ میں سربراہ معاشی، معاشرتی کمیشن ایشیا پیسیفک بھی رہ چکی ہیں۔

حیدرآباد میں پیدا ہونے والی ڈاکٹر شمشاد اختر نے قلیل مدت کے لیے وفاقی اور سندھ حکومت کے پلاننگ ڈپارٹمنٹ میں بھی کام کیا۔

انہوں نے ابتدائی تعلیم کراچی اور اسلام آباد میں حاصل کی اور 1987 میں ہارورڈ یونیورسٹی کے ڈپارٹمنٹ آف اکنامکس کی ویزیٹنگ فیلو بھی رہی ہیں۔

عبداللہ حسین ہارون:

نگران کابینہ میں شامل دوسرے وزیر عبدالله حسین ہارون اقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل مندوب رہ چکے ہیں۔

عبدالله حسین ہارون کا تعلق ہارون خاندان سے ہے، وہ سر عبدالله ہارون کے پوتے اور سعید ہارون کے بیٹے ہیں جن کی سماجی آزادی اور سیاسی حقوق کے لیے نمایاں خدمات ہیں۔

محمد اعظم:

نگراں وفاقی وزیر محمد اعظم خان ریٹائرڈ سینئر بیورو کریٹ ہیں اور وہ چیف سیکریٹری پختونخوا کے طور پر بھی خدمات سرانجام دے چکے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

میں تمہیں چھوڑوں گا نہیں اگر ۔۔۔۔۔۔چیف جسٹس ثاقب نثار نے آج یہ وارننگ کسے جاری کر دی ؟ تازہ ترین خبر

لاہور (ویب ڈیسک) سپریم کورٹ آف پاکستان نے لاہور ڈیویلپمنٹ اتھارٹی (ایل ڈی اے) سٹی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *