Friday , May 24 2019
ہوم > انٹرنیشنل > بھارت میں جنونی ہندوؤں نے گائے کی اسمگلنگ کا الزام لگا کر ایک مسلمان قتل کردیا

بھارت میں جنونی ہندوؤں نے گائے کی اسمگلنگ کا الزام لگا کر ایک مسلمان قتل کردیا

نئی دہلی:
بھارت میں جنونی ہندوؤں کے ہجوم نے دو مسلمان نوجوانوں کو گائے کی خرید و فرخت کا الزام لگا کر بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں ایک نوجوان جاں بحق ہو گیا ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق رام گڑھ کے علاقے الور میں گزشتہ شب ایک بجے دو نوجوان اکبر اور اسلم ایک ایک گائے کو پیدل اپنے ہمراہ لے جا رہے تھے کہ ہندو ہجوم نے گھیر کر گائے کی ملکیت سے متعلق پوچھا۔ ہجوم کا خیال تھا کہ دونوں نوجوان گائے کو ذبح کرنے یا فروخت کرنے کے لیے لے جا رہے ہیں۔
ہجوم نے دونوں نوجوانوں کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں نوجوان اکبر موقع پر ہی دم توڑ گیا جب کہ اسلم مشتعل ہجوم سے جان بچانے میں کامیاب ہو گیا۔ پولیس نے قتل اور اقدام قتل کی دفعات کے تحت نامعلوم افراد کے خلاف ایف آئی آر درج کر کے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔واضح رہے کہ بھارت میں مشتعل ہجوم کے ہاتھوں معصوم لوگوں کی ہلاکتوں میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے جس پر حال ہی میں بھارتی سپریم کورٹ نے مشتعل ہجوم کے ہاتھوں ہلاکتوں کے خلاف پارلیمنٹ کو سخت قانون سازی کرنے کا حکم دیا تھا۔

یہ بھی دیکھیں

مودی سرکار نے انتخاب میں کامیاب ہوتے ہی ایران پر بجلیاں گرادیں

واشنگٹن (این این اائی)بھارت نے امریکا سے اپنے سیاسی تعلقات کی بنیاد پر ایران سے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *