Thursday , April 25 2019
ہوم > پاکستان > یہ ہوئی نہ مردوں والی بات ۔۔۔۔۔شیخ رشید نے میدان سیاست کا انوکھا ریکارڈ اپنے نام کر لیا

یہ ہوئی نہ مردوں والی بات ۔۔۔۔۔شیخ رشید نے میدان سیاست کا انوکھا ریکارڈ اپنے نام کر لیا

لاہور (ویب ڈیسک ) عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کو موجودہ قومی اسمبلی میں سینئر ترین رکن بننے کا اعزاز حاصل ہو گیا ۔شیخ رشید پہلی بار 1985ء کے غیر جماعتی انتخابت میں رکن اسمبلی منتخب ہوئے اس کے بعد،1993،،1997،1990،1988 2013،2002ءاور اب 2018ء میں آٹھویں بار رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے ہیں
2013 ء کے انتخابات کے بعد مخدوم امین فہیم ، چوہدری انور علی چیمہ ،چوہدری نثار علی خان ، اور شیخ رشید احمد پاکستان میں سینئر ترین پارلیمنٹرین کے طور پر سامنے آئے تھے مگر مخدوم امین فہیم اور چوہدری انور چیمہ گزشتہ اسمبلی دور میں وفات پا گئے جبکہ چوہدری نثار علی خان حالیہ انتخابات میں قومی اسمبلی کے دونوں حلقوں این اے 59 اور این اے 63 میں انتخابی معرکہ ہار جانے کی وجہ سے قومی اسمبلی سے باہر ہو گئے جب دوسری جانب پاکستان کی پارلیمانی تاریخ کی 15 ویں قومی اسمبلی کا افتتاحی اجلاس جاری ہے جس دوران نو منتخب اراکین اسمبلی نے حلف اٹھا لیاہے۔قومی اسمبلی کے اجلاس میں آصف علی زرداری، شہباز شریف، عمران خان سمیت دیگر پرانے اور سینئر سیاستدانوں نے اسمبلی میں پہلی مرتبہ منتخب ہو کر آنے والے اراکین کے ساتھ مل کر حلف اٹھایا۔تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی کا اجلاس سپیکر ایاز صادق کی زیر صدارت ہوا جس دوران سب سے پہلے قومی اسمبلی کا ترانہ پڑھا گیا اور تلاوت قرآن پاک کی گئی جس کے بعد سپیکر ایاز صادق نے گیلری میں موجود معزز مہمانوں کو نام لے کر خوش آمدید کہا جس میں یوسف رضا گیلانی اور گوہر ایوب شامل تھے۔ ایاز صادق نے بطور مہمان اسمبلی میں آنے پر ان کا شکریہ بھی ادا کیا۔اس کے بعد سپیکر ایاز صادق نے تمام نو منتخب اراکین اسمبلی سے حلف لیا اور اب حاضری لگانے کا سلسلہ جاری ہے
جس میں سب سے پہلا نام آصف علی زرداری کا پکارا گیا۔ آصف علی زرداری سپیکر کے ڈیسک پر پہنچے اور انہوں نے ایاز صادق سے مصافہ کیا اور پھر حاضری لگائی جبکہ اس موقع پر پیپلز پارٹی کے ارراکین کی جانب سے بھٹو کے نعرے بھی لگائے گئے۔قومی اسمبلی میں انتہائی دلچسپ منظر اس وقت دیکھنے میں آیا جس وقت بلاول اسمبلی میں پہنچے تو عمران خان اپنی نشست سے اٹھ کر ان سے ملنے گئے اور ہاتھ ملایا۔اس تاریخی موقع پر بلاول بھٹو کی بہنیں آصفہ بھٹو اور بختاور بھٹو بھی قومی اسمبلی میں اپنے بھائی کو حلف اٹھاتے ہوئے دیکھنے کیلئے آئیں۔قومی اسمبلی کے سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کے انتخاب کے لئے کاغذات نامزدگی کل دن 12 بجے تک سیکرٹری قومی اسمبلی کے دفتر میں جمع کرائے جا سکیں گے، انتخاب 15 اگست کو ہو گا جس کے بعد وزیر اعظم کے انتخاب کا شیڈول جاری کیا جائے گا، نومنتخب ارکان کی اجلاس میں شر کت، حلف برداری، سپیکر، ڈپٹی سپیکر اور وزیر اعظم کے انتخاب میں ووٹ ڈالنے کے لئے قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کی طرف سے جاری کیا جانے والا کارڈ لازمی ہو گا۔نومنتخب ارکان کے کوائف اکٹھا کرنے اور کارڈ کے اجرا کیلئے قومی اسمبلی کے کمیٹی روم نمبر 2 میں خصوصی سہولت مرکز قائم کر دیا گیا، جو ہفتہ اور اتوار کو بھی کھلا رہا، اجلاس کے موقع پر سکیورٹی انتظامات یقینی بنانے اور گیلریوں میں بیٹھنے کی گنجائش میں کمی کے باعث ہر رکن کو مہمانوں کے لئے 2 گیلری کارڈ جاری کئے جائیں گے، قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کی طرف سے ارکان سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ ہر اجلاس سے ایک روز پہلے اپنے مہمانوں کے نام، شناختی کارڈ اور گاڑی نمبرفراہم کریں بصورت دیگر ان کو ریڈزون میں داخل نہیں ہونے دیا جائے گا۔

یہ بھی دیکھیں

سری لنکامیں 350سے زائدلوگوں کوہلاک کرکے کس چیز کا بدلہ لیا،گرفتاردہشتگردوں کے اعتراف سے دنیابھرمیں ہلچل مچ گئی

کولمبو(ویب ڈیسک) گزشتہ دنوں سری لنکا میں پے درپے متعدد بم دھماکے ہوئے جن میں …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *