Tuesday , November 13 2018
ہوم > اسپشیل اسٹوریز > پنجاب کے 9 اضلاع میں یونیورسٹیز کے قیام کا فیصلہ : یہ جامعات کیسی ہوں گی، تعلیمی دنیا سے بڑی خبر آگئی

پنجاب کے 9 اضلاع میں یونیورسٹیز کے قیام کا فیصلہ : یہ جامعات کیسی ہوں گی، تعلیمی دنیا سے بڑی خبر آگئی

لاہور(ویب ڈیسک) وزیر ہائر ایجوکیشن راجہ یاسر ہمایوں نے پنجاب میں اعلیٰ تعلیم کا معیار بہتر بنانے کے لئے اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ صوبے کے معیار تعلیم پر کسی بھی قسم کا سمجھوتہ نہیں کریں گے۔ صوبائی وزیر نے وائس چانسلر کو ترجیحی بنیادوں پر معیار تعلیم بہتر بنانے کی ہدایت کردی ہے۔
وزیر ہائر ایجوکیشن راجہ یاسر ہمایوں نے وزیر اعظم کے 100روزہ پلان کے تحت تعلیمی اصلاحات سے متعلق اہم اجلاس کی صدارت کی۔ پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن میں ہونے والے اجلاس میں چیئر مین پی ایچ ای سی ڈاکٹر نظام الدین، ایڈیشنل سیکٹری ہائر ایجوکیشن مریم کیانی ، ڈی جی پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن ڈاکٹر شاہد سمیت دیگر نے شرکت کی۔ اجلاس میں تعلیم سے متعلق پانچ سالہ پالیسی سازی اور وزیر اعظم کے ۱۰۰ روزہ پلان پر بات چیت کی گئی۔ اس موقع پر صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ حکومت اعلیٰ تعلیم کے میدان میں اصلاحات لانے کے لئے پر عزم ہے ۔ ہمارے پورے تعلیمی نظام میں اصلاحات کی ضرورت ہے ہمیں پاکستان میں جدید علوم کو بین الاقوامی معیار کے مطابق متعارف کروانے کی ضرورت ہے۔انہوں نے ماہرین تعلیم سے صوبے کا معیار تعلیم بہتر بنانے کے لئے مشاورتی اجلاس بھی شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔وزیر تعلیم کا کہنا تھا کہ وہ کپتان کے پروگرام کو عملی جامہ پہنا نے میں کوئی کسر اٹھا نہیں رکھیں گے۔ تعلیمی پالیسی سے متعلق انہوں نے کہا کہ حکومت صوبہ کے نو اضلاع میں عالمی معیار کی تحقیقاتی جامعات کے قیام کا منصوبہ بنا رہی ہے جن کا شمار دنیا کے 500بہترین یونیورسٹیز میں ہو گا۔
وزیر ہائر ایجوکیشن راجہ یاسر ہمایوں کے مطابق آ غاز میں مختلف ممالک کے تعاون سے جنوبی پنجاب سمیت 3اضلاع میں جامعات کا قیام عمل میں لایا جائے گا ، ہائر ایجوکیشن میں مینجمنٹ اور ریسرچ ٹریننگ کے لئے ادارہ بھی قائم کیا جائے گا ۔ وفاقی حکومت ریسرچ ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کے قیام کے لئے جگہ فراہم کرے گی۔ پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن اور ہائر ایجوکیشن کمیشن آف پاکستان کے ساتھ مل کر اس ضمن میں جامع پالیسی مرتب کرے گی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ہمارے امتحانی نظام اور پیپر مارکنگ سسٹم میں بھی اصلاحات کی ضرورت ہے۔ ہمیں بین الاقوامی سطح پر قابل قبول گریڈنگ سسٹم متعارف کروانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اساتذہ کی تبادلوں سے متعلق خودکار نظام متعارف کروانے کی منصوبہ بندی کی جارہی راجہ یاسر ہمایوں کے مطابق اس نظام سے ضلعی سطح پر ہی اساتذہ کے تبادلوں اور دیگر معاملات کو حل کیا جائے گا۔ صوبائی وزیر نے تعلیم معیار میں بہتری کے لئے پی ایچ ای سی کی کاوشوں کو سراہا۔ ان کا کہنا تھا کہ پی ایچ ای سی کے زیر انتظام طلبا کو فنی تربیت کی فراہمی کے لئے کمیونیٹی کالجز پراجیکٹ ایک اہم سنگ میل ہے۔

یہ بھی دیکھیں

حوض کوثر سے جام پینے کی طلب لیکن یہ دراصل کیسی ہے؟ دین کی روشنی میں آپ بھی جانئے

لاہور(ویب ڈیسک)ہر مسلمان مردوعورت محشر کے روزآقائے دوجہاں کے دست مبارک سے جام کوثر پینے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *