Tuesday , November 13 2018
ہوم > انٹرنیشنل > افیئرکے شبہ میں شوہر کے ہاتھوں 32سالہ خاتون قتل،پھر اپنی 2سالہ بیٹی کو لے کر قاتل لاش کے پاس 24گھنٹے تک کیا کرتارہا؟پولیس اہلکار بھی یقین نہ کرسکے کیونکہ ۔ ۔ ۔

افیئرکے شبہ میں شوہر کے ہاتھوں 32سالہ خاتون قتل،پھر اپنی 2سالہ بیٹی کو لے کر قاتل لاش کے پاس 24گھنٹے تک کیا کرتارہا؟پولیس اہلکار بھی یقین نہ کرسکے کیونکہ ۔ ۔ ۔

نئی دہلی (ویب ڈیسک) میاں بیوی کا رشتہ انتہائی نازک ہوتاہے جو اعتماد جیسی چیز پر آگے بڑھ رہاہوتاہے لیکن جب اسی میں شک کا عنصر شامل ہوجائے تو ہنستے بستے گھرانے اجڑ جاتے ہیں، ایسا ہی کچھ بھارت میں ہوا جہاں بیوی کے کسی کیساتھ افیئرکے شک پر شوہر نے اپنی اہلیہ کو موت کے گھاٹ اتار دیا لیکن جب چوبیس گھنٹے لاش کیساتھ گزارنے کے بعدگرفتاری دینے تھانے پہنچا تو پولیس نے بھی اسے نشے کی خماری سمجھا اور گرفتاری کی بجائے موقع ملاحظہ کرنے کو ترجیح دی۔
ہندوستان ٹائمز کے مطابق دہلی کے 24 سالہ شخص نے اپنی بیوی کو قتل کرنے اور اس کی لاش کے ساتھ 24 گھنٹے گزارنے کے بعد پولیس تھانے جاکر قتل کا اعتراف کیا24 سالہ کامل نامی شخص نے پولیس تھانے پہنچ کر خود ہی اعتراف کیا کہ اس نے اپنی 32 سالہ اہلیہ ریشماں کو کسی کے ساتھ افیئر کی شک کی بنیاد پر غیرت میں آکر قتل کیا۔
پولیس نے بتایا کہ کامل نے آدھی رات کوتھانے آکر پولیس کو واقعے سے آگاہ کیا تاہم ملزم کو نشے میں دیکھ کر پولیس اہلکاروں نے ان پر یقین نہیں کیا۔رپورٹ کے مطابق ملزم کی جانب سے شدید زور ڈالے جانے کے بعد پولیس نے جائے وقوع کا دورہ کیا، جہاں ان کی اہلیہ کو مردہ حالت میں پایا گیا۔
پولیس کے مطابق ملزم نے دوران تفتیش اعتراف کیا کہ اس نے بیوی کو اپنی 2 سالہ بیٹی کے سامنے قتل کرنے کے بعد اس کی لاش کے ساتھ 24 گھنٹے گزارے، لاش کے ساتھ بیٹھ کر اپنی بیٹی کو 24 گھنٹے تک گود میں لیے رکھا، تاہم جب بچی رونے لگی تو اسے شرمندگی محسوس ہوئی، جس وجہ سے انہوں نے پولیس کو واقعے سے آگاہ کیا۔

یہ بھی دیکھیں

تبدیلی والوں کا شاندار اقدام : نوجوانوں کو گمراہ ہونے سے بچانے کے لیے کیا فیصلہ کر لیا گیا ؟ اولاد سے پریشان والدین کے کام کی خبر

لندن (ویب ڈیسک) وزیر داخلہ ساجد جاوید نے نوجوانوں کو جرائم سے روکنے اور گینگز …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *