Wednesday , December 19 2018
ہوم > انٹرنیشنل > ٹیکسی ڈرائیور نے میاں بیوی کے ساتھ ایسا کیا کام کر دیا کہ عدالت کو سزا سنانا پڑ گئی؟ جان کر آپ بھی یقین نہیں کریں گے

ٹیکسی ڈرائیور نے میاں بیوی کے ساتھ ایسا کیا کام کر دیا کہ عدالت کو سزا سنانا پڑ گئی؟ جان کر آپ بھی یقین نہیں کریں گے

فرانس ( ویب ڈیسک ) ایک عدالت نے تھائی لینڈ کے ایک جوڑے سے ایئرپورٹ سے ان کی منزل تک پہنچانے کے لیے معمول کے کرایے سے زیادہ وصول کرنے والے جعلی ٹیکسی ڈرائیور کو 8 ماہ قید کی سزا سنا دی۔ٹیکسی ڈرائیور نے روائیسی چارلس گال ایئرپورٹ سے سینٹرل پیرس تک 45 سے 55 یورو

معمول کےکرایے کے بجائے تھائی جوڑے سے 247 یورو کا مطالبہ کیا۔رپورٹ کے مطابق ٹیکسی ڈرائیور کی شناخت اینوک سی کے نام سے ہوئی جنہیں تھائی جوڑے نے 200 یورو دینے کی پیش کش تھی اور جب ان کی گفتگو کی ویڈیو یوٹیوب پر نشر ہوئی تو حقائق منظر عام پر آئے اور یہ ویڈیو وائرل ہوئی۔مذکورہ ٹیکسی ڈرائیور ویڈیو میں یہ دعویٰ کرتا ہے کہ وہ ایک نجی ٹیکسی سروس کے لیے کام کرتے ہیں جو فرانس میں وی ٹی سی کے نام سے جانی جاتی ہے۔تھائی جوڑے نے ٹیکسی ڈرائیور کے مطالبے پر انہیں زور دیا کہ وہ ٹیکسی کے دروازے کھولے تاکہ وہ پولیس اسٹیشن پہنچ کر شکایت کریں۔جب ان سے لائسنس دکھانے کا مطالبہ کیا گیا تو انہوں نے ایک دستاویز دکھائی۔عدالت میں سماعت کے دوران ٹیکسی ڈرائیور نے کرایے کے حوالے سوال پر اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ ‘میں اس حوالے سے کچھ نہیں جانتا کیونکہ میں ٹیکسی ڈرائیور نہیں ہوں’۔ایک فرانسیسی ویب سائٹ کا کہنا تھا کہ وی ٹی سی نیٹ ورک نے تصدیق کی ہے کہ اینوک سی ان کے ہاں رجسٹرڈ نہیں ہیں۔جب تھائی جوڑے نے انہیں 180 یورو ادا کرنے کی پیش کش کی تو وہ ان سے تلخ انداز میں پیش آرہے ہیں

اور چلاتے ہوئے کہہ رہے ہیں کہ ‘آپ مجھے 200 یورو دیں، مجھے ادا کریں’۔تھائی مسافر چارکرد نے 9 نومبر کوسوشل میڈیا میں یہ ویڈیو جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ ‘میں تصویر بنانے کی کوشش کر رہا تھا کہ اس دوران جعلی ٹیکسی ڈرائیور نے میرے فون پر حملہ کیا جو میرے چہرے پر آلگا’۔انہوں نے کہا تھا کہ ‘جب ہم پولیس کو فون کررہے تھے تو اس دوران وہ ٹیکسی کی رفتار تیز کررہا تھا لیکن ناکام گفتگو کو کافی دیر ہوئی اور زیادہ وقت لگا تو ہم تھک گئے اور فیصلہ کیا کہ باہر نکلنے کے لیے 200 یورو دے دیے جائیں اور بالآخر ہم باہر آسکے’۔بعد ازاں پیرس کی ٹیکسی نیٹ ورک نے اپنی سروس کے حوالے سے تمام تفصیلات بھی جاری کر دیں۔خیال رہے کہ پیرس میں 17 ہزار سے زائد ٹیکسیاں چلتی ہیں لیکن نجی طور پر وی ٹی سی کا نیٹ ورک بھی گاڑیاں چلاتا ہے جس کی خدمات کے لیے پہلے بکنگ کی جاتی ہے۔ اور فیصلہ کیا کہ باہر نکلنے کے لیے 200 یورو دے دیے جائیں اور بالآخر ہم باہر آسکے’۔بعد ازاں پیرس کی ٹیکسی نیٹ ورک نے اپنی سروس کے حوالے سے تمام تفصیلات بھی جاری کر دیں۔خیال رہے کہ پیرس میں 17 ہزار سے زائد ٹیکسیاں چلتی ہیں لیکن نجی طور پر وی ٹی سی کا نیٹ ورک بھی گاڑیاں چلاتا ہے جس کی خدمات کے لیے پہلے بکنگ کی جاتی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

پیوٹن پر حملہ،ٹرمپ بہرے ،بھارت کا صفایا اور۔۔۔ مشہور نابینا خاتون نجومی کی حیران کن پیشگوئیاں

لاہور (ویب ڈیسک )درست پیشین گوئیاں کرنے والی بلغاریہ کی نابینا خاتون بابا وانگا نے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *