Wednesday , December 19 2018
ہوم > پاکستان > نواز شریف جب جیل میں تھے تو انہوں نے 7 بار سپریٹنڈٹ سے نام پوچھا، جب آٹھویں مرتبہ نام پوچھا تو پھر کیا ہوا؟

نواز شریف جب جیل میں تھے تو انہوں نے 7 بار سپریٹنڈٹ سے نام پوچھا، جب آٹھویں مرتبہ نام پوچھا تو پھر کیا ہوا؟

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک)معروف صحافی ہارون رشید کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ ن شریف خاندان کے بغیر بھی باقی رہے گی اس پارٹی کو کوئی ختم نہیں کر سکتا، شریف خاندان اپنی مدت پوری کر چکا ہے۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی کا کہنا تھا کہ
مسلم لیگ ن پاکستان کی سٹریم پارٹی ہے، اس ے اب کوئی نہیں ختم کر سکتا۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف جب جیل میں تھے تو انہوں نے جیل کے سپرٹینڈٹ سے سات سے آٹھ مرتبہ نام پوچھا ، جب پھر انہوں نے نام پوچھا تو وہ بجائے جواب دینے کے خاموش ہوگیا ۔ جب سپرٹنڈٖٹ خاموش ہوا تو انہیں احساس بہت بار نام پوچھ چکے ہیں۔ ہارون رشید نے انکشاف کیا کہ نواز شریف کی یاداشت،صحت اور حالت خراب ہو چکی ہے ۔ نواز شریف ایک دیوتا ہیں اور تمام دیوتاؤں کے ساتھ ایسا ہی سلوک ہوتا ہے جو اس وقت شریف خاندان کے ساتھ ہو رہا ہے۔ اگر عمران ان سے سبق نہیں سیکھیں گا تو اس کے ساتھ بھی یہی کچھ ہوگا ۔ انکا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن شریف خاندان کے بغیر زندہ رہ سکتی ہے، ہر چیز کی کوئی نہ کوئی عمر ہوتی ہے ، شریف خاندان کی عمر پوری ہو چکی ہے۔ حمزہ ،سلمان شہباز نے جیل جانا ہے، زرداری بھی جیل جائیں گے جبکہ تحریک انصاف کے کچھ رہنماء بھی جیل جائیں گے لیکن عمران خان کی اس وقت کوشش یہ ہے کہ پی ٹی آئی کا کوئی بھی بندہ جیل نہ جائے۔ انہوں نے کہا کہ کچرا تو پی ٹی آئی میں اتنا ہی موجود ہے جتنا دوسری جماعتوں میں تھا۔ عمران خان پر طنز کرتے ہوئے ہارون الرشید کا کہنا تھا کہ ملک کے ایک کونے سے لے کر دوسرے کونے تک 10 ارب روپے خرچ کر کے بینرز لگوائے جائیں کہ انسانی تاریخ میں پہلی مرتبہ کوئی ایماندار پیدا ہوا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان آنے والے متحدہ عرب امارات کے شہزادہ سلطان کے ساتھ خوفناک حادثہ ، تصاویر

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات سے پاکستان آئے شہزاہ سلطان ٹریفک حادثے میں شدید …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *