Monday , December 10 2018
ہوم > پاکستان > سعودی عرب میں پاکستانیوں کے ساتھ اچھا سلوک نہیں ہورہا: شہریار آفریدی

سعودی عرب میں پاکستانیوں کے ساتھ اچھا سلوک نہیں ہورہا: شہریار آفریدی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) وفاقی وزیر برائے مملکت شہریار آفریدی کی اسلامک یونیورسٹی کے سربراہ سے ملاقات، سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں کے حقوق کے لیے آواز اٹھاتے ہوئے احمد یوسف الدرویش کو کھری کھری سنا دیں۔ تفصیلات کے مطابق سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہو رہی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ وزیر مملکت براائے داخلہ شہریار آفریدی سعودی اسلامک یونیورسٹی کے سربراہ احمد یوسف الدرویش سے ملاقات کرتے ہیں اور ملاقات میں پاکستانیوں کے حقوق کی آواز اٹھاتے ہوئے کہتے ہیں کہ
’’ سعودی عرب میں پاکستانیوں کے ساتھ اچھا سلوک نہیں ہو رہا ، دیگر عرب ممالک میں بھی پاکستانیوں کے ساتھ ناروا سسلوک کیا جاتا ہے، پاکستانیوں کو جیلوں میں ڈالا جاتا ہے ، تنخواہیں نہیں دی جاتیں، آپ سے درخواست ہے کہ پاکستانیوں کے مسائل پر آواز اُٹھائیں ، یہ معاملہ اب ختم ہونا چااہیئے کیونکہ اس حوالے سے ہم بہت سخت ناراض ہیں۔ ‘‘شہریار آفریدی کا احمد یوسف الدرویش کو کہنا تھا کہ ’’ مثال کے طور پر میں ڈرگ ڈیلر ہوں اور اایک پاکستانی بزرگ شہری کو عمرہ کاٹکٹ اور ویزہ لے دیتا ہوں ، پکڑے جانے پر آپ لوگ اس بزرگ کا سر قلم کرتے ہیں، تحقیقات کیوں نہیں کراتے ؟ سعودی جیل کی بیرکوں میں پندرہ بندوں کی گنجائش ہے تو آپ لوگوں نے وہاں پر 200 بندہ کیوں رکھا ہوا ہے؟ ہمارا پڑھا لکھا بچہ سعودی عرب جاتا ہے تو اسکی تنخواہ 4 سے 5 ہزار ریال ہوتی ہے جبکہ گوری چمڑی والے نالائقوں کو اسی کام کے آپ لوگ 30 سے 40 ہزار تک ریال دیتے ہیں ، ہم لوگ خود ہی مسلمان کو کمتر کرنے میں لگے ہوئے ہیں۔‘‘
ششہریار آفریدی مزید کہتے ہیں کہ ’’ ہم نے کسی سے کچھ نہیں ماانگا، ہمارا ایمان اللہ پر ہے، سعودی عرب کو عزت دیں گے لیکن سعودی عرب بھی پاکستانیوں کو گلے لگائے۔ ‘‘
ویڈیو دیکھیں :

یہ بھی دیکھیں

تلور اور مور کے شکا ر اور گوشت کا جنون : بھارتی صوبہ راجھستان کے اکثر خاندان لاولد کیوں رہ جاتے ہیں ؟ دنگ کر ڈالنے والے حقائق پر مبنی ایک انوکھی تحریر

لاہور (ویب ڈیسک) کسی زمانہ میں افغانستان بھی تَلَور کے غیر ملکی شکاریوں کا پسندیدہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *