Thursday , December 13 2018
ہوم > پاکستان > معذوری مجبوری نہیں رہے گی : حکومت پنجاب نے ایسا اعلان کر دیا کہ جان کر معذور افراد خوشی سے جھوم اٹھیں گے

معذوری مجبوری نہیں رہے گی : حکومت پنجاب نے ایسا اعلان کر دیا کہ جان کر معذور افراد خوشی سے جھوم اٹھیں گے

اسلام آباد ( ویب ڈیسک ) حکومتِ پنجاب نے سپریم کورٹ کو آگاہ کیا ہے کہ معذور افراد کی آن لائن رجسٹریشن اور جائزہ لینے کے لیے مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم مرتب کردیا گیا ہے۔ اس آن لائن ڈیٹا کی مدد سے معذور افراد کونجی اور سرکاری اداروں میں 3 فیصد کوٹے کے تحت مختص مناسب نوکریاں کی تلاش میں مدد ملے گی۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق اس آن لائن ڈیٹا کی مدد سے معذور افراد کونجی اور سرکاری اداروں میں 3 فیصد کوٹے کے تحت مختص مناسب نوکریاں کی تلاش میں مدد ملے گی ۔ سپریم کورٹ میں جسٹس شیخ عظمت سعید پر مشتمل 2 رکنی بینچ نے معذور افراد کے حقوق سے متعلق کیس کی سماعت کی
حکومتِ پنجاب نے سپریم کورٹ کو آگاہ کیا ہے کہ معذور افراد کی آن لائن رجسٹریشن اور جائزہ لینے کے لیے مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم مرتب کردیا گیا ہے۔جس میں حکومت پنجاب کی جانب سے مذکورہ رپورٹ پیش کی گئی۔عدالت میں یہ رپورٹ سیکریٹری محکمہ سماجی بہبود اور بیت المال کی جانب سے جمع کروائی گئی جس میں کہا گیا کہ صوبائی حکومت نے معذور افراد کا کوٹہ 2 فیصد سے بڑھا کر 3 فیصد کردیا ہے ۔ رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ تمام محکموں میں گریڈ 1 سے 4 تک کی 4 ہزار 2 سو 94 آسامیوں پر بھرتیوں کے لیے اشتہار دیا گیا جس میں سے 3 ہزار 9 سو 88 افراد کو بھرتی کیا جاچکا ہے ۔ رپورٹ میں فراہم کی گئیں تفصیلات کے مطابق تقریباً 74 فیصد یعنی 2 ہزار9 سو 47 افراد جسمانی معذور، 6 سو 90 یعنی 17 فیصد جزوی طور پر نابینا اور 9 فیصد یعنی 3 سو 51 افراد سننے کی صلاحیت سے محروم تھے ۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ گزشتہ 5 سالوں کے دوران2013 سے 2018 تک صوبائی حکومت کو تقریباً 14 کروڑ 99 لاکھ روپے نجی اداروں میں 3 فیصد کوٹے کے مطابق جاب نہ دینے کی صورت میں موصول ہوئے ۔ اس رقم کو5 لاکھ 97 ہزار 4 سو 32 افراد میں تقسیم کر کے ان کی مدد کی گئی ۔ رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ حکومتِ پنجاب نے معذور افراد کے لیے پنجاب ویلفیئر ٹرسٹ بورڈ قائم کیا ہے جس نے فروری 1997 میں اپنا کام شروع کیا اور ایک بورڈ آف گورنرز اس کی سربراہی کرتا ہے ۔ پاکستان میں معذور افراد کی فلاح و بہبود کا قانون ہی موجود نہیں۔ رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ مذکورہ ٹرسٹ کے لیے صوبائی حکومت سالانہ ایک ارب روپے فراہم کرتی ہے جبکہ ایک ایگزیکٹو کمیٹی اس کے امور انجام دیتی ہے۔رپورٹ میں اس امر پر زور دیا گیا کہ معذور افراد کےحوالے سے موجود قوانین میں عالمی میعار کے مطابق ترمیم ضروری ہے جس کے لیے ایک نئے قانون کا مسودہ تیاری کے مراحل میں ہے ۔

یہ بھی دیکھیں

معاشی بحران ختم ہونے کا وقت آن پہنچا : وزیراعظم عمران خان نے شاندار فیصلہ کر لیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت تیل و …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *