9

بگڑے ملازمین کی شامت۔۔۔ پی آئی اے انتظامیہ نے سدھارنے کیلئے بڑی کارروائی ڈال دی

لاہور (ویب ڈیسک) پی آئی اے ملازمین کے لیے ڈیوٹی کے لئے وقت کی پابندی لازمی قرار دے دی گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق پی آئی اے کے صدر و چیف ایگزیکٹیو آفیسر ائیر مارشل ارشد ملک کے علم میں یہ بات آئی تھی کہ پی آئی اے کے ملازمین ڈیوٹی

پر بہت تاخیر سے آتے ہیں یا اکر فوری غائب ہو جاتے ہیں جس پر انہوں نے تمام ملازمین اور افسران کو وقت پر آفس پہنچنے کی ہدایت کی اور حاضری کو یقینی بنانے کے لیےقومی ائر لائن میں جنرل ڈیوٹی کرنے والے ملازمین کی حاضری ٹائم مینجمنٹ سسٹم (ٹی ایم ایس) پر لگانے کا حکم دے دیا۔ ہیڈ آفس میں ڈیوٹی اوقات صبح 9 بجے سے شام 30-5 بجے کر دیئے گئے۔ پی آئی اے اسٹاف 3 دن تاخیر سے آئے گا تو ایک روز کی تنخواہ کاٹ لی جائے گی ، جس کا سرکلر جاری کردیا گیا۔ سرکلر کے مطابق قومی ائرلائن میں وقت کی پابندی نہ کرنے والوں کو تین بار وارننگ کے بعد محکمانہ کارروائی کا سامنا کرنا ہوگا۔ انتظامیہ کا کہنا ہے کہ تمام شعبہ جات کے سربراہ ملازمین کی 30 روزہ حاضری کی مکمل رپورٹ سی ای او کو پیش کریں گے۔ ڈیوٹی کے نئے احکامات آنے کے بعد قومی ائیر لائن میں وقت کی پابندی نہ کرنے والے اور ڈیوٹی سے غیر حاضری رہنے والے عادی ملازمین کی پریشانی میں اضافہ ہو گیا ہے۔ کہ تمام شعبہ جات کے سربراہ ملازمین کی 30 روزہ حاضری کی مکمل رپورٹ سی ای او کو پیش کریں گے۔ ڈیوٹی کے نئے احکامات آنے کے بعد قومی ائیر لائن میں وقت کی پابندی نہ کرنے والے اور ڈیوٹی سے غیر حاضری رہنے والے عادی ملازمین کی پریشانی میں اضافہ ہو گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں