5

اداکارہ شین کا مساج سینٹر: سچ کیا جھوٹ کیا ؟ ایک ایسی خبر جو آپ کو دنگ کر ڈالے گی

لاہور(ویب ڈیسک)لاہور اورروشنیوں کےشہر کراچی سمیت ملک کے دیگر بڑے شہروں میں لاتعداد مساج سنٹر موجود ہیں شوبز سے وابستہ کئی شخصیات نے مختلف ادوار میں بیوٹی پارلرز اور مساج سنٹرز بنائے جن میں سے کامیاب نہ ہونے کی وجہ سے بند ہوچکے ہیں اور ایک دو بیوٹی پارلرز میں صرف خواتین کیلئے

مساج کی سہولت موجود ہے جبکہ مردوں کیلئے مساج صرف چند سیلونز میں کیا جاتا ہے ان سیلونز کے مالکان کا شوبز سے کوئی واسطہ نہیں ہے ۔ جن معروف اداکاراؤں نے بیوٹی پارلرز بنائے ان میں نادیہ علی،شین،رچل خان،عائشہ صنم خان،نرگس اوردیدار کے نام نمایاں ہیں ان تمام پارلرز میں شین کے بیوٹی سیلون میں خواتین اور مردوں کے لئے الگ الگ مساج کی سہولت موجود تھی لیکن کچھ مسائل کی وجہ سے شین نے مساج کا سلسلہ ختم کردیا ۔ ماضی میں چند غیر معروف فنکاراؤں نگار،سوھنی،نمرہ،عائشہ،لائبہ،سوہا اور دیگر کے بیوٹی پارلرز میں مساج کی سہولت بھی موجود تھی لیکن یہ تمام بیوٹی پارلرز کاروباری خسارے کی وجہ سے بند ہوچکے ہیں ۔شوبز سے وابستہ شخصیات کا کہنا ہے کہ امیر لوگ مساج کیلئے کسی پارلر یا سیلون میں نہیں جاتے وہ گھر پر ہی مساج کا اہتمام کرلیتے ہیں فلم اور سٹیج کی کئی اداکاراؤں گھر پر ہی خواتین سے مساج کرواتی ہیں کیونکہ یہ ان کو بہت سستا پڑتا ہے اور کسی قسم کی ٹینشن بھی نہیں ہوتی۔حال ہی معروف گلوکار و ماڈل رابی پیرزادہ نے کہا ہے کہ شوبز کے ساتھ اپنے ذاتی کارروبار پر بھی بھرپور توجہ دے رہی ہوں ،ایک فنکار کے لئے شوبز کے ساتھ سائیڈ بزنس بھی ہوناچاہیے کیونکہ عروج کے ساتھ زوال بھی ایک دن آنا ہوتا ہے ۔ ایک انٹرویو میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے پاکستان میں فنکاروں کو جو احترام حاصل ہے وہ پاکستان میں نہیں ہے ۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ اچھا اورخالص میوزک دلوں کو چھو لیتا ہے ۔انسان ساری عمر سیکھتا ہے اس لیے میں ابھی تک خود کو مکمل تصور نہیں کرتی اور کرےئر میں جتنا بھی کام کیا اس پر مطمئن ہوں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں