Sunday , May 19 2019
ہوم > انٹرنیشنل > نیوزی لینڈ:ایک شخص سیاہ لباس پہنے مسجد میں داخل ہوا اور پھر۔۔۔۔۔ کرائسٹ چرچ حملے کے عینی شاہد نے واقعہ کا افسوسناک احوال بتا دیا

نیوزی لینڈ:ایک شخص سیاہ لباس پہنے مسجد میں داخل ہوا اور پھر۔۔۔۔۔ کرائسٹ چرچ حملے کے عینی شاہد نے واقعہ کا افسوسناک احوال بتا دیا

کرائسٹ چرچ(ویب ڈیسک ) نیوزی لینڈ کی دو مساجد میں حملے اور شہادتوں کے بعد ملک بھر میں الرٹ کردیا گیا اور اب سی بی ایس نیوز ایک عینی شاہد کی زبانی وہاں ہونیوالے واقعے کی کہانی سامنے لے آیا ہے ۔رپورٹ کے مطابق عینی شاہد لین پنیہا نے ایسوسی ایٹڈ پریس کو بتایا کہ

اس نے سیاہ لباس میں ملبوس ایک شخص کو اس نے مسجد النور میں داخل ہوتے دیکھا اور پھر درجنوں گولیوں کی آواز سنائی دی ۔ جس کے بعد خوف کے مارے لوگ مسجد سے باہر بھاگتے دکھائی دیئے ۔ پنیہا مسجد کے قریب ہی رہائش پذیر ہے اور اس نے بتایاکہ فائرنگ کے بعد مسلح شخص وہاں سے بھاگا اور بظاہرسیمی آٹومیٹک ہتھیار دکھنے والا اسلحہ پھینکا اور فرار ہوگیا ۔ پنیہا نے بتایا کہ وہ مسجد میں لوگوں کی مدد کرنے کے لیے گیا ۔ ہرجگہ پر شہید لوگوں کو دیکھا۔ تین جسد خاکی ہال میں پڑے تھے ، مسجد کے مرکزی دروازے اور اندر بھی موجود تھے ۔ یہ منظرناقابل یقین تھا ، میرے لیے یہ یقین کرنا مشکل ہے کہ کیسے کوئی شخص لوگوں کیساتھ ایسا کرسکتا ہے ۔ یہ انتہائی مضحکہ خیز ہے ۔ وہاں سے نکلنے میں پانچ لوگوں کی مدد کی جن میں سے ایک معمولی زخمی تھا۔ پنیہا نے بتایا کہ میں اس مسجد کے قریب ہی پانچ سالوں سے رہائش پذیر ہوں۔ یہ لوگ شاندار ہیں ۔ وہ انتہائی دوستانہ ماحول میں رہتے ہیں ۔ پھر یہ سب کچھ میرے لیے ناقابل فہم ہے ۔ اس نے بتایا کہ حملہ آور سفید فام تھا جس نے ہیلمٹ پر کچھ ڈیوائس نما چیز لگا رکھی تھی جس کی وجہ سے وہ ایک فوجی سے ملتی جلتی مشابہت میں تھا۔نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ کی 2 مساجد میں نماز جمعہ میں مسلح افراد کی فائرنگ کے نتیجے میں جاں بحق افراد کی تعداد 27 ہوگئی۔

یہ بھی دیکھیں

اللہ کا قہر یا کچھ اور ۔۔۔۔۔۔؟؟؟ چند روز قبل افغانستان میں 15 پولیس اہلکاروں کی ایک ہی واقعہ میں ہلاکت دراصل کیسے ہوئی ؟ خبر آپ کو بھی حیران کر ڈالے گی

کابل(ویب ڈیسک) افغانستان کے جنوبی صوبہ ہلمند کے دارالحکومت میں طالبان سے جھڑپوں کے دوران …