22

اسلام زندہ باد : سانحہ نیوزی لینڈ کے شہدا کے لیے سعودی حکومت نے مسجد نبویؐ میں ایسا کام کر دیا کہ جان کر آپ کی خوشی کی انتہا نہ رہے گی

مدینہ (ویب ڈیسک) نیوزی لینڈ میں شہید ہونے والے مسلمانوں کی مسجد حرام اور مسجد نبوی میں غائبانہ نماز جنازہ ادا کی گئی۔العربیہ کے مطابق کل جمعہ کو نماز جمعہ کے بعد نیوزی لینڈ کے شہر کرائیسٹ چرچ میں دو مساجد میں شہید ہونے والے 50 مسلمانوں کی غائبانہ نماز جنازہ ادا کی گئی

اور شہداء کی بلندی درجات کے لیے خصوصی دعائیں کی گئیں۔اس موقع پرحرمین شریفین کی انتظامی امور کمیٹی کے چیئرمین الشیخ عبدالرحمان السدیس نے کہا کہ نیوزی لینڈ میں مسلمان نمازیوں‌کی شہادت پر ان کی غائبانہ نماز جنازہ اس بات کا برملا اظہار ہے کہ سعودی عرب عالم اسلام اور مسلمانوں کے مسائل کو غیر معمولی اہمیت دیتا ہے۔ سعودی عرب نے دہشت گردی کے خلاف جرات مندانہ موقف اختیار کیا ہے اور واضح کیا ہے کہ دہشت گردوں کا کوئی دین اور مذہب نہیں ہوتا۔مسجد حرام میں نماز جنازہ کی امامت امام کعبہ الشیخ ڈاکٹر ماھر المعیقلی نے جبکہ مسجد نبوی میں الشیخ عبداللہ البعیجان نے کرائی۔ ایک اور خبر کے مطابق جرمن پولیس نے دہشت گرد حملے کی منصوبہ بندی کرنے والے 10 انتہا پسندوں کو گرفتار کرکے اسلحہ و مسروقہ سامان برآمد کرلیا۔جمعہ کو’’ ڈیلی میل‘‘ کی رپورٹ کے مطابق جرمن پولیس نے فرینک فرٹ کے علاقے میں کامیاب کارروائی کرتے ہوئے دہشت گردی کی منصوبہ کرنے والے 10 انتہا پسندوں کو گرفتار کرلیا، ملزمان کی عمریں 20 سے 42 برس کے درمیان بتائی جاتی ہیں۔جرمن حکومت کی جانب سے گرفتار ملزمان کی شہریت اور نام ظاہر نہیں کیے گئے ہیں، پولیس نے ملزمان کے قبضے سے اسلحہ، چھریاں، 20000 یورو کی رقم اور الیکٹرانک ڈیوائس برآمد کرلی۔واضح رہے کہ 2016 میں جرمنی کے دارالحکومت برلن کی کرسمس مارکیٹ میں دہشت گردوں کے حملے کے نتیجے میں 12 افراد ہلاک ہوگئے تھے جس کی ذمہ داری دہشت گرد گروپ نے قبول کی تھی۔چار روز قبل اٹلی میں سکول بس ہائی جیک کرنے میں ناکامی پر دہشت گرد نے اسکول وین کو آگ لگادی تھی جس کے نتیجے میں 12 بچے جھلس گئے تھے۔بس ڈرائیور کے خلاف ماضی میں بھی جرائم میں ملوث ہونے کے مقدمات درج تھے، نشے میں دھت گاڑی چلانے پر جرمانہ بھی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں