18

ڈونلڈ ٹرمپ کیسے صدربنے ؟؟ دو سال بعد امریکی صدارتی انتخابات میں روسی مداخلت کی انکوائری رپورٹ منظرعام پرآگئی ، سارا کچا چٹھا کھل گیا

واشنگٹن (ویب ڈیسک) امریکا کے صدارتی انتخابات میں مبینہ روسی مداخلت کی تحقیقات دو سال بعد مکمل ہوگئیں، اسپیشل کونسل رابرٹ میولر نے اپنی رپورٹ اٹارنی جنرل کو پیش کردی، اٹارنی جنرل بل بار سربمہر رپورٹ کاجائزہ لیں گے۔ بل بار رواں ہفتے کے آخر تک کانگریس کے لیے رپورٹ کا خلاصہ تیار

کریں گے، وائٹ ہاؤس نے خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ وہائٹ ہاؤس کو یہ رپورٹ نہیں دی گئی اور نہ اس سے متعلق کچھ بتایا گیا، میڈیا رپورٹس کے مطابق رپورٹ میں مزید کسی شخص کے خلاف فرد جرم عائد کرنے کی سفارش نہیں کی گئی، ٹرمپ صدارتی مہم میں روسی مداخلت کے الزام کو مسترد کرچکے ہیں، ادھر ڈیموکریٹ اراکین نے اٹارنی جنرل سے مکمل رپورٹ جاری کرنے کا مطالبہ کیا ہے، اس سے قبل بھی یہ خبر آئی تھی کہ امریکا میں 2020 کے صدارتی انتخابات کے لیے خود کو نامزد کرنے والی بھارتی نژاد ڈیموکریٹک سینیٹر کمالہ ہیرس ،،، بھوری رنگت کی حامل پہلی خاتون ہیں جنہوں نے اس منصب کے لیے نامزدگی کا اعلان کیا ہے۔ وہ منشیات کی اسمگلنگ اور جنسی تشدد کے حوالے سے اپنے شدید مواقف کی وجہ سے جانی جاتی ہیں، کمالہ ڈیوز ہیرس 20 اکتوبر 1964 کو ریاست کیلیفورنیا کے شہر اوکلینڈ میں پیدا ہوئیں۔ وہ 2016 میں اپنی ریاست سے امریکی سینیٹ کی رکن منتخب ہوئیں۔ انہوں نے 2011 سے 2017 تک کیلیفورنیا میں پبلک پراسیکیوٹر کے طور پر کام کیا، کمالہ سینیٹر کے طور پر کام کرنے والی پہلی امریکی خاتون ہیں جن کی والدہ کا تعل بھارت سے ہے۔ ان کے والد کا تعلق جمیکا سے ہے اور انہوں نے اسٹینفورڈ یونیورسٹی میں تعلیم حاصل کی۔ کمالہ کی والد ایک بھارتی سفارت کار کی بیٹی ہیں اور وہ سرطان کے شعبے میں تحقیق سے وابستہ رہیں ،کمالہ نے 1986 میں ہارورڈ یونیورسٹی سے پولیٹیکل سائنس اور اکنامکس میں گریجویشن کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں