Thursday , May 23 2019
ہوم > پاکستان > وزرات چھوڑنے کے بعد اسد عمر کا بڑا کھڑاک ۔۔۔۔ آنے والے وزیر خزانہ کے لیے خطرے کی گھنٹی بجا دی، تمام حقائق عوام کے سامنے لے آئے

وزرات چھوڑنے کے بعد اسد عمر کا بڑا کھڑاک ۔۔۔۔ آنے والے وزیر خزانہ کے لیے خطرے کی گھنٹی بجا دی، تمام حقائق عوام کے سامنے لے آئے

لاہور(نیوز ڈیسک) تحریک انصاف کے مرکزی رہنماء اسد عمر نے کہا ہے کہ نیا وزیرخزانہ بھی مشکل معاشی حالات کوسنبھالے گا،حکومت کوچاہیے کہ نئے وزیرخزانہ کے مشکل فیصلوں کے ساتھ کھڑی ہو، امید نہ کی جائے کہ فوری دودھ شہید کی ندیاں بہنا شروع ہوجائیں گی،مجھے یقین ہے کہ نیا پاکستان بنے

گا، عمران خان نئے پاکستان کی قیات کرے گا۔انہوں نے وزارت خزانہ سے استعفے کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نے پہلے بھی کہا تھا کہ کارکردگی کی بنیاد پر ردوبدل کرنا چاہتے ہیں ، وہ چاہتے ہیں کہ وہ توانائی کا چارج لیں۔ میں نے ان کو کہا کہ آپ اجازت دیں کہ میں کابینہ سے استعفیٰ دے دوں۔ انہوں نے کہا کہ میں نئے پاکستان کیلئے ہمیشہ دستیاب ہوں۔انہوں نے کہا کہ سات سال کا سفر تھا، میں نے آج کے دن پی ٹی آئی جوائن کی تھی،عمران خان نے کہا تھا کہ آپ ہمارے شامل ہوں۔اس سفر کے اندر میں پی ٹی آئی کے تمام سپورٹرز کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں۔ ہماری پی ٹی آئی کی نوجوان یوتھ کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں۔انہوں نے کہا کہ میرے دور میں معیشت میں بڑی بہتری آئی ہے۔ نیا وزیرخزانہ بھی جو آئے گا وہ مشکل معیشت کو سنبھالے گا۔ ہر کوئی سمجھتا تھا کہ مشکل ترین نوکری میرے پاس ہے۔ہم اس وقت بہتری کی طرف جا رہے ہیں، صرف تھوڑے مشکل فیصلے کرنے کی ضرورت ہے۔اگر ہم جلد بازی کریں گے اور مشکل فیصلے نہیں کریں گے توپھر کھائی میں گر جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ میرے بعد جو بھی آئے گا حکومت کو چاہیے کہ اس کے مشکل فیصلوں کے ساتھ کھڑی ہو، امید نہ کی جائے کہ فوری دودھ شہید کی ندیاں بہنا شروع ہوجائیں گی۔انہوں نے کہا کہ ہم آئی ایم ایف پروگرام میں جارہے ہیں، جو بھی شخص اب وزارت خزانہ کی ذمہ داری لے گا اس کو فوری بجٹ بھی بنانا ہے، بجٹ بہت مشکل ہوگا۔اسد عمر نے کہا کہ مجھے معلوم نہیں میرے فیصلے سے پی ٹی آئی مضبوط ہوگی یا کمزور ہوگی، میں سازشوں کا حصہ بننے کیلئے تیار نہیں ہوں، مجھے نہیں معلوم کوئی سازش ہوئی ہے یا نہیں، مجھے میرے کپتان نے کہا کہ آپ نے یہ ذمہ داری لینی ہے ، تو میں نے سنبھالی۔انہوں نے کہا کہ وزیرخزانہ کی ذمہ داری 21کروڑ عوام ہے۔اس کی ذمہ داری کیپٹل مارکیٹ ہی نہیں ہے،بلکہ عوام کو ریلیف دینا بھی ہوگی، میں نے واضح کہا تھا کہ میں عوام کا کچومر نکالنے کو تیار نہیں ہوں۔

یہ بھی دیکھیں

’’ میرے پاس وزیر اعظم کے کارڈ کے علاوہ سب کارڈ موجود ہیں۔۔۔‘‘ جو بھی ہمارے گھر آ رہا ہے وہ کیا کر رہا ہے؟ ننھی فرشتہ کا والد دکھ سے پھٹ پڑا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک ) اسلام آباد میں زیادتی کے بعد قتل ہونی والی 10سالہ ننھی …