23

ڈالر کا پلٹ کر تگڑا وار ، پاکستانی روپیہ بری طرح پٹ گیا، نئی قیمت جان کر آپ بھی یقین نہیں کریں گے

کراچی (نیوز ڈیسک) اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں 30 پیسے کا اضافہ ہو گیا۔ تفصیلات کے مطابق اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں 30 پیسے کا اضافہ ہوا جس کے بعد ڈالر کی قیمت 141 روپے 80 پیسے ہو گئی۔ ڈالر 142 روپے 60 پیسے میں فروخت ہو رہا ہے۔ جبکہ انٹربینک میں ڈالر 141 روپے 40 پیسے

کی سطح پر مستحکم ہے۔ واضح رہےکہ معاشی ماہرین کے مطابق پاکستان نے عالمی مالیاتی فنڈ آئی ایم ایف سے رجوع کیا جس کے بعد ڈالر کی قیمت میں مزید اضافہ ہونے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔ گذشتہ روز موصول ہونے والی خبروں کے مطابق ڈالر مہنگا، بجلی اور گیس کی قیمتوں میں خوفناک اضافہ ہو گا، اس حوالے سے آئی ایم ایف کی ظالمانہ ترین شرائط قبول کر لی گئی ہیں۔ آئی ایم ایف کے مطالبے پر 460 ارب روپے کے ٹیکسز اکٹھے کرنے کے لیے نئے ٹیکسز عائد کیے جائیں گے، بجلی، پیٹرول اور ڈالر کی قیمت کا تعین کرنے والے اداروں میں حکومتی مداخلت ختم کر دی جائے گی۔ حال ہی میں ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافہ جبکہ پاکستانی کرنسی میں مسلسل کمی ہوئی جس سے ملک میں مہنگائی کا طوفان آ گیا۔ جس کے بعد اسٹیٹ بینک متحرک ہو گیا ۔ رواں ماہ کے آغاز پر ایکس چینج کمپنیوں سے ایگزیکٹو ڈائریکٹر اسٹیٹ بینک سید عرفان شاہ نے ملاقات کی۔ ملاقات میں حکومتی نمائندوں کی جانب سے ڈالر کے ریٹ 150 روپے تک جانے کے بیانات سے عوام میں منفی پیغام پھیلنے، ڈالر کی قیمتوں کو پر لگ جانے اور روپے کی قدر میں مزید کمی اور ڈالر کے مارکیٹ سے غائب ہو جانے پر شدید تشویش کا اظہار کیا گیا۔ عرفان شاہ کا کہنا تھا کہ مارچ میں بڑی ادائیگیوں کی وجہ سے ڈالر کی طلب تھی، اب روپیہ مزید ڈی ویلیو نہیں ہوگا، نہ ہی حکومت کا ایسا کوئی ارادہ ہے، انٹربینک میں جب ڈالر کی طلب زیادہ ہوگی تو وقتی طور پر ڈالر کا ریٹ بڑھے گا جس کے بعد ریٹ خود بخود کم بھی ہوگا۔ لیکن اس سب کے باوجود تمام دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے اور ڈالرکی قیمت میں اضافہ ہوتا چلا رہا ہے جس سے مہنگائی بڑھنے کا بھی خدشہ ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں