6

طالبان کے حملوں میں 10 فوجی ہلاک

کابل: (نیوز ڈیسک ) افغان صوبے زابل میں طالبان نے 2 چیک پوسٹوں پر حملہ کر کے 10 افغان فوجی ہلاک کر دیئے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق ان چیک پوسٹوں پر حملے کے بعد 4 فوجی زخمی بھی ہوئے۔ دوسری طرف کابل میں واقع ملک کی سب سے بڑی جیل پُل چرخی میں قیدیوں اور

پولیس کے درمیان تصادم ہوا۔افغان میڈیا کے مطابق دو روز سے جاری تصادم میں اب تک 5 قیدی ہلاک جبکہ 107 زخمی ہو گئے ہیں۔افغان میڈیا کے مطابق تصادم اس وقت شروع ہوا جب پولیس اہلکار قیدیوں کے سیلز میں موبائل فون کی تلاشی لینے کے لیے داخل ہوئے۔ ذرائع کے مطابق قیدی اپنے کمروں میں موبائل فون کے ذریعے غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث تھے۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق ایران سے کشیدگی بڑھنے پر امریکہ نے عراق میں موجود اپنے سرکاری ملازمین کو وطن واپس بلا لیا ہے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق بغداد میں امریکی سفارت خانے کا کہنا ہے کہ سفارت خانے اور اربیل میں واقع امریکی قونصل خانے میں معمول کی ویزا خدمات عارضی طور پر معطل رہیں گی۔دوسری طرف امریکہ نے اپنے شہریوں کو بھی ہنگامی خدمات مہیا کرنے کی صلاحیت محدود کر دی ہے اور ہدایت کی ہے کہ جلدی سے جلدی عراق سے روانہ ہو جائیں۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کےمطابق امریکی محکمہ خارجہ نے شہریوں کیلئے چوتھے درجےکی سفری ہدایت جاری کی ہے ۔ صرف اتنا کہا گیا ہے کہ’’ سفر نہ کیا جائے‘‘۔یہ فیصلہ دہشت گردی، اغوا کی واداتوں اور مسلح تنازع کے پیش نظر کیا گیا ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی شہری تشدد اور اغوا کے خطرے سے دوچار ہوسکتے ہیں۔ عراق میں دہشت گرد اور مزاحمت کار گروپ فعال ہیں جو امریکی شہریوں پر حملے کر سکتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں