31

بریکنگ نیوز : سعودی عرب کے فوجی اسلحہ ڈپو پر خوفناک حملہ، پوری دنیا میں تشویش کی لہر دوڑ گئی

بریکنگ نیوز : سعودی عرب کے فوجی اسلحہ ڈپو پر خوفناک حملہ، پوری دنیا میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ۔۔۔۔۔ریاض(نیوز ڈیسک) سعودی عرب کی قیادت میں قائم عسکری اتحاد نے کہا ہے کہ یمنی باغیوں کی حوثی ملیشیا نے ایک ڈرون سے نجران میں واقع ایک سویلین مقام کو نشانہ بنایا ہے۔

قبل ازیں اس ایران نواز ملیشیا کے نشریاتی ادارے نے بتایا تھا کہ ایک ڈرون حملے میں نجران میں واقع سعودی اسلحے کے گودام کو نشانہ بنایا گیا، جس کے بعد ہتھیاروں کے اس ڈپو میں آگ لگ گئی تھی۔ سعودی عرب نے اس حملے میں کسی ممکنہ جانی نقصان کا کوئی ذکر نہیں کیا۔ قبل ازیں پیر بیس مئی کو حوثی باغیوں نے اس سعوی الزام کی تردید کی تھی کہ انہوں نے مسلمانوں کے لیے انتہائی مقدس شہر مکہ کی جانب کوئی بیلسٹک میزائل داغا تھا۔ دوسری جانب پاکستان کی مکہ اور جدہ پر حوثیوں کی جانب سے بیلسٹک میزائل داغنے کی مذمت ، سعودی عربکے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہیں، حملے کو ناکام بنانے پر چاق و چوبند بہادر سعودی افواج خراج تحسین کے مستحق ہیں۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کی جانب سے سعودی عرب کے شہروں مکہ اور جدہ کو میزائلوں سے نشانہ بنانے کی کوشش پر شدید ردعمل دیا ہے۔پاکستان کی جانب سے سعودی شہریوں کو نشانہ بنانے کی کوشش کی شدید مذمت کی گئی ہے۔ پاکستان نے مکہ پر حوثیوں کی جانب سے بیلسٹک میزائل داغنے کی مذمت کرتے ہوئے اس حملے کو ناکام بنانے پر چاق و چوبند بہادر سعودی افواج کو سراہا ہے۔ منگل کو دفتر خارجہ کی جانب

سے جاری بیان کے مطابق پاکستاننے سعودی عرب کے ساتھ یکجہتی کرتے ہوئے اپنے اس عزم کو دہرایا ہے کہ سلطنت کی سلامتی کو لاحق ہونے والے کسی بھی خطرے کے خلاف پاکستانسعودی عرب کی حمایت کرے گا۔دوسری جانب پاکستان کے علماء کرام کی جانب سے بھی سعودی عرب پر میزائل حملوں کی شدید مذمت کی گئی ہے۔ کہا گیا ہے کہ حرمین شریفین کی موجودگی کے باعث سعودی عرب پوری دنیا کے مسلمانوں کا محور و مرکز ہے۔ حجازِ مقدس کی طرف دیکھنے والی ہر میلی آنکھ کو نکال دیا جائے گا۔ پاکستان کے عوام کے دل سعودی عوام کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔ کسی بھی مشکل گھڑی میں برادر اسلامی ملک کو تنہا نہیں چھوڑیں گے۔جبکہ واضح رہے کہ سعودی فضائیہ نے گزشتہ روز یمن کی جانب سے داغے گئے دو بیلسٹک میزائلوں کو فضا میں ہی ناکارہ بنا کر مکة المکرمہ اور جدہ شہروں کو بڑیتباہی سے بچا لیا تھا۔ سعودی اخبار کے مطابق سعودی فضائیہ نے یمن کی جانب سے داغے گئے ایک میزائل کو طائف کی فضائی حدود جبکہ دوسرے میزائل کوجدہ کی فضائی حدود میں ناکارہ بنایا۔ واضح رہے کہ یمن میں سرگرم حوثیوں نے پہلی مرتبہ مکة المکرمہ کو نشانہ بنانے کی کوشش نہیں کی، اس سے قبل جولائی 2017ء میں بھی ایسی ناپاک جسارت کی گئی تھی تاہم وہ بھی ناکام بنا دی گئی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں