41

ڈالر کی اونچی اُڑان۔۔۔ آج اوپن مارکیٹ میں کتنے کا ہوگیا؟ ملکی معیشت کو دھچکہ

کراچی (نیوز ڈیسک) انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں ایک مرتبہ پھر سے اضافہ ہو گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ڈالر کی قدر میں اضافے اور روپے کی قدر میں کمی کا سلسلہ جاری ہے۔ آج ڈالر کی قیمت میں 66 پیسے کا اضافہ ہوا جس کے بعد فاریکس ڈیلرز کے

مطابق انٹر بینک میں ڈالر 155.84 سے بڑھ کر 156.50 روپے کی نئی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا ہے۔دوسری جانب گذشتہ ہفتےاسٹاک ایکسچینج میں صورتحال مستحکم رہی۔ بجٹ سے قبل مارکیٹ میں ایک روزمعمولی گراؤٹ ہوئی اورانڈیکس 34 ہزارکی سطح پرپہنچا لیکن ریکوری ہوگئی اورہفتےکا اختتام 35572 پوائنٹس پرہوا۔ گذشتہ ہفتے بھی ڈالر نے ایک بارپھراونچی اُڑان بھری تھی اوریوں ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر157 روپے50 پیسے پرپہنچ گیا تھا ۔گذشتہ ہفتے وفاقی بجٹ پیش ہوا ساتھ ہی ڈالر بھی تاریخ کی بلند ترین سطح کو چُھوگیا۔ہفتے کےآخری روزانٹر بنک میں ڈالر 2 روپے 94 پیسے مہنگا ہوکر155.84 روپے کی بلند سطح پر بند ہوا تھا۔ اسی طرح گذشتہ ہفتے کے اختتام پراوپن مارکیٹ میں ڈالر 157.50 روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا، اوپن مارکیٹ میں 5 روز کے دوران ڈالر8.70 روپے مہنگا ہوا۔ کرنسی مارکیٹ ذرائع کے مطابق آئی ایم ایف سے پاکستان کے معاہدے کی خبروں کے بعد روپے پر دباؤ کے باعث ڈالر مہنگا ہوا۔ذرائع کے مطابق پاکستان کے آئی ایم ایف سے معاہدے کے بعد روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قیمت میں اضافے کی خبریں گردش کررہی تھیں ۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کے اقتدار میں آنے کے بعد سے اب تک ڈالر کی قیمت میں لگ بھگ 24 روپے کا اضافہ ہوچکا ہے۔ستمبر 2018ء میں ڈالر 134 روپے پر ٹریڈ کررہا تھا جس کے بعد اب گذشتہ 9 ماہ کے دوران ڈالر بڑھ کر 158 روپے پر پہنچ چکا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں