35

اب لین دین ہوگا اپنی کرنسی میں ۔۔۔ فیس بُک نے ڈالر کی چھٹی کراتے ہوئے بڑا فیصلہ کر لیا

لندن (نیوز ڈیسک ) فیس بک نے دنیا بھر کی 27 آرگنائزیشنزکے ساتھ مل کر نئی کرنسی لانے کا فیصلہ کر لیا جسے “لبرا” کا نام دیا گیا ہے۔فیس بک اس مقصد کے لیے ایک غیر منافع بخش تنظیم کا آغاز کرے گا جو کہ ایک نئی کرنسی تخلیق کرے گی۔لیبرا کرنسی لانے کا

مشن ایک عام عالمی مالیاتی بنیادی ڈھانچہ بنانا ہے جو دنیا بھر میں اربوں لوگوں کے لیے فائدہ مند ثابت ہو گا۔نئی کرنسی لانے کا منصوبہ بلاکچین ٹیکنالوجی کی طرف سے 2020 میں لانچ کیا جائے گا۔ڈیجیٹیل کرنسی لوگوں کی زندگیوں میں بہت آسانیاں لائے گا کیونکہ اس کے استعمال سے رقم ہر وقت کیش کی صورت میں پاس رکھنے کی ضرورت نہیں ہڑے گی۔یہ خاص طور پران لوگوں کے لئے بہت مفید ثابت ہو گا جو روایتی بینکوں یا مالی خدمات تک رسائی نہیں رکھتے ۔اس وقت دنیا بھر میں کروڑوں ایسے افراد ہیں جن کے پاس موبائل فون تو ہے تاہم وہ بینک اکاؤنٹ نہیں رکھتے۔فیس بک کے ڈیجیٹل کرنسی متعارف کروانے کے بعد لوگ ایک دوسرے کو پیسے بلکل ایسے بھیج سکیں گے جیسے وہ مختلف ایپس پر ایک دوسرے کو پیغامات بھیجتے ہیں۔اس کے ساتھ ساتھ فیس بک کیلبرا نامی ایک آزاد ماتحت ادارہ بھی شروع کرے گا۔جو اس کے صارفین کے لیے پیسے بھیجنے، خرچ کرنے اور بچانے کے لیے کام کرے گا۔اس کے لیے ایک “ڈیجیٹل والٹ” بنایا جائے گا جو کہ لوگوں واٹس ایپ اور میسنجر پر ایک علیحدہ ایپ کے طور پر دستیاب ہو گا۔خیال رہے دنیا کی سب سے بڑی سوشل ویب سائٹ فیس بک ڈیجیٹل کرنسی کی تیاری میں کئی عرصے سے مصروف تھی ۔ فیس بک بٹ کوائن کی طرز پر ڈیجیٹل کرنسی تیار کرنے میں مصروف تھی ۔جس کے لیے فیس بک نے ڈیجیٹل کرنسی تیار کرنے والی چند کمپنیوں کی خدمات حاصل کی اور ان کے ساتھ ابتدائی تجربات پر کام کیا۔فیس بک نے ڈیجیٹل کرنسی بنانے کے لیے درجنوں ڈیجیٹل کرنسی تیار کرنے والی کمپنیوں کے ساتھ مل کر کام کیا۔واضح رہے فیس بک کے اس وقت دنیا بھر میں ڈھائی ارب سے زائد صارفین ہیں اور وہ دنیا کی سب سے بڑی سوشل ویب سائٹ ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں