65

میں حکومت کو اتنے پیسے دوں گا ۔۔۔۔ نیب کے زیر حراست آصف علی زرداری نے بالآخر بڑا اعلان کر دیا

کراچی (ویب ڈیسک) سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ سو ارب ڈالر تو کیا میں حکومت کو 7ڈالر نہ دوں، 7 روپے دوں گا ،آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ میں نے کوی ٹھیکا نہیں لیا تھا جو حکومت کو پیسے دوں، میں 7سو ارب ڈالر تو کیا میں حکومت کو 7ڈالر نہیں دوں گا،

سابق صدر آصف علی زرداری نے بجٹ پاس ہونے پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ بجٹ پاس نہیں بلکہ بلڈوز ہو گیا ۔سلیکٹ ہو کر آنے والوں کو کیا سمجھایا جا سکتا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار آصف علی زرداری نے ہفتہ کے روز پارلیمنٹ میں آمد کے موقع پر صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ پارلیمنٹ ہائوس میں 2019-20 کا بجٹ پاس ہونے کے سوال پر آصف زرداری نے کہا کہ بجٹ پاس نہیں ہوا بلکہ بلڈوز کیا گیا یہ سلیکٹڈ حکومت ہے اور سیلیکٹ ہو کر آنے والوں کو کیا سمجھایا جا سکتا ہے ۔چیئرمین سینٹ سے متعلق معاملات نمٹانے کے سوال کے جواب میں سابق صدر نے کہا کہ مجھے جیل میں معلومات نہیں پہنچتیں کہ چیئرمین سینٹ کسے منتخب کیا جا رہا ہے اور معاملات کہاں تک پہنچیں ہیں ۔ کہا ہے کہ چیئرمین سینیٹ الیکشن میں ایک سینیٹرساتھ چھوڑسکتا ہے، اس سینیٹر کا تعلق خیبر پختونخواہ سے ہے، میثاق معیشت پر بات سلیکٹڈ فرد سے نہیں،ریاست پاکستان سے کریں گے، یقین ہے جب بات کا موقع آیا تو سلیکٹڈ فرد نہیں ہوگا۔انہوں نے پارلیمنٹ ہاؤس میں نجی ٹی وی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے معاشی معاملات پربات سلیکٹڈ فردسے نہیں بلکہ ریاست پاکستانسے کریں گے۔ ہمیں پورا یقین ہے کہ جب بات کرنے کا موقع آئے گا یہ سلیکٹڈ فرد نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین سینیٹ الیکشن میں ایک سینیٹرساتھ چھوڑسکتا ہے، اس سینیٹر کا تعلق خیبر پختونخواہ سے ہے، انھوں نے کہا کہ حکومت سے کوئی ڈیل نہیں ہو رہی ،

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں