9

سب سے بڑا تہلکہ ۔۔۔۔ جج ارشد ملک کے بعد ناصر بٹ کی ’ جج محمد بشیر ‘ کو خریدنے کی کوشش، رشوت کے طور پر کیا چیز لے کر انکے گھر پہنچ گئے؟ بڑی خبر

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) معروف صحافی عمران خان کا کہنا ہے کہ جن دنوں احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کے خلاف پراپیگنڈا چل رہا تھا تب اسلام آباد کے صحافی انعام اللہ خٹک کا میرے پروگرام میں کہنا تھا کہ میں جج محمد بشیر کواچھی طرح جانتا ہوں۔ان کے بچے سرکاری سکولوں میں پڑھتے رہے ہیں۔محمد بشیر ایک

غریب آدمی ہیں۔جج محمد بشیر اتنے ایماندار شخص ہیں کہ ان کے گھر پر مہمانوں کو بٹھانے کے لیے فرنیچر بھی موجود نہیں تھا۔اس خبر کے دو روز بعد ہی ناصر بٹ فرینچر سے بھرا ٹرک لے کر جج محمد بشیر کے گھر پہنچے اور انہوں نے صحافی کو فون کیا کہ آپ نے بتایا تھا کہ محمد بشیر کے گھر فرنیچر موجود نہیں تھا اس لیے ہم فرنیچر لالئے ہیں۔آپ ان سے رابطہ کریں تاکہ سامان ان کے گھر پہنچایا جا سکے۔جس پر صحافی نے ناصر بٹ کو کہا کہ جج صاحب ایک ایماندار شخص ہیں وہ ناراض ہو جائیں گے۔جب کہ ناصر بٹ نے مریم نواز کو ناگوار گزرنے والے صحافی کو بھی خریدنے کی کوشش کی تھی۔بقول اس صحافی کے ناصر بٹ نے اس صحافی کو ہاتھ سے پکڑا اور سائیڈ پر لے گئے۔ ناصر بٹ نے اس صحافی کو گاڑی کی چابی اور 5 لاکھ روپے بطور رشوت آفر کی۔صحافی کی ناصر بٹ سے لڑائی ہو گئی اور اس نے کہا کہ میں شور مچا دوں گا۔جس کے بعد ناصر بٹ نے معذرت کرتے ہوئے ان سے گاڑی کی چابی واپس لی اور پیسوں کی آفر بھی واپس لے لی۔خیال رہے ناصر بٹ کا نام اس وقت خبروں کی زینت بنا جب جج ارشد ملک کی ویڈیو لیک ہوئی۔ویڈیو میں ناصر بٹ کو دیکھا جا سکتا تھا۔ پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدرمریم نواز احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی ویڈیو سامنے لے کر آئیں جس میں احتساب عدالت کے جج کی ویڈیونوازشریف کے چاہنے والے ن لیگی ناصر بٹ ے بنائی،ویڈیو میں جج صاحب تسلیم کررہے ہیں کہ میں بہت پریشان ہوں، میں نے ظلم کیا، میرا ضمیرمجھے جھنجھوڑ رہا ہے،جج صاحب نے ناصر بٹ کو خود گھر بلا کر ثبوت پیش کیے کہنوازشریف بے قصور ہے۔بتایا گیا ہے کہ ناصر بٹ کا تعلق ن لیگ سے ہے تاہم وہ پاکستان مین 2قتل کیے جانے کے مقدمے میں بھی نامزد ہیں اور ان پر کئی اور کیسز بھی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں