47

بھارت کے ساتھ پاکستان کی فضائی حدود بند کی جائے گی یا نہیں۔۔۔؟؟؟ حکومت نے باقاعدہ اعلان کر دیا

لاہور (نیوز ڈیسک ) حکومت نے بھارت کیلئے فضائی حدود بند کردیے جانے کی خبروں کی تردید کردی، وزیراعظم عمران خان تاحال فضائی حدود کی بندش کی تجویز کا جائزہ لے رہے ہیں، حتمی فیصلہ 2 سے 3 روز میں کیا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق حکومت نے بھارت کیلئے پاکستان کی فضائی حدود بند کر دیے

جانے کی خبروں پر وضاحتی بیان جاری کیا گیا ہے۔اس حوالے سے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہےکہ بھارت کے لیے فضائی حدود بند کرنے کا تاحال فیصلہ نہیں کیا گیا۔ وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان تمام صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں اور اس حوال سے جلد فیصلہ کر لیا جائے گا۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا مزید کہنا ہے کہ اب بھارت سے رابطے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔جبکہ بھارتی وزیر خارجہ یا کسی دوسرے سفیر میں بھی بات کرنے کی جرات نہیں ہے۔ شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ شملہ معاہدے کے تحت ہم نے مقبوضہ کشمیر کامسئلہ طے کرنا تھا۔ تاہم اب یکطرفہ غیر قانونی اقدامات سے بھارت فضا خراب کر رہا ہے۔ بھارتی اقدامات کے بعد عالمی برادری کی مقبوضہ کشمیر سے متعلق رائے تبدیل ہورہی ہے۔ سلامتی کونسل کا اجلاس بھارتی مخالفت کے باوجود منعقد ہوا جو اس بات کا واضح ثبوت ہے کہ عالمی برادری اب صرف بھارت کی نہیں سن رہی۔وزیر خارجہ کا مزید کہنا ہے کہ بھارتی سپریم کورٹ نے مودی سرکار کے مقبوضہ کشمیر سے متعلق اقدام پر اسے نوٹس جاری کیا ہے۔ بھارتی سپریم کورٹ بی جے پی حکومت کے دباؤ میں ہے اور اس وقت بھارتی سپریم کورٹ کا امتحان ہے۔ یہاں یہ بات واضح رہے کہ رواں برس فروری کے ماہ میں پاک بھارت کشیدگی کے بعد پاکستان نے بھارت کیلئے اپنی فضائی حدود بند کر دی تھی جو کئی ماہ تک بند رہی۔ تاہم کچھ ہفتے قبل فضائی حدود کو کھول دیا گیا تھا۔ اب مقبوضہ کشمیر کی موجودہ صورتحال کے باعث پاکستان پھر سے بھارت کیلئے اپنی فضائی حدود بند کرنے پر غور کر رہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں