Sunday , September 23 2018
ہوم > کالم

کالم

حضرتِ حسین اور ہم۔۔۔مجاہدبخاری

تاریخ کی ایک خوبی ہے کہ وہ انسان کو اسکا اصل یاد دلائے رکھتی ہے اور کامیاب انسان وہی ہوتا ہے جو اپنے اصل سے منہ نہ پھیرے ۔ جو اپنے اصل کو بھول بیٹھا سمجھو اس نے اپنی شناخت گنوا دی۔ خیر تو میں بات کر رہا تھا تاریخ …

» مزید پڑھیں

میلاد البنی۔۔۔۔۔۔۔۔۔تحریر:۔عثمان خالد

اس بار گھر سے واپس آتے ہوئے جب میں سڑک پر تیز گام کی طرح آ رہا تھا، میں اکیلا گھر سے نکلا تھا ۔جب قصور روڈ پر آیا تو بائیک کی اسپیڈ 100 کر دی ۔ اپنی جان کی کوئی پرواہ نہ تھی تمام گزرے دنوں کی باتیں میرے …

» مزید پڑھیں

دل کے ارماں اورلاہورمیں دل کاہسپتال۔۔۔محمدمناظرعلی

ہمارے ہاں احساس ذمہ داری کی بہت کمی ہے،چاہے کسی کی بھی مثال لے لیں،کسی محکمے،کسی شعبے اورکسی بھی طبقے کودیکھ لیں،شایدیہی وجہ ہے کہ ہم ترقی کے میدان میں بہت پیچھے رہ گئے ہیں،سرکاری نوکری حاصل کرنے والے بہت سے ایسے افرادبھی ہیں جو یہ سوچ کرجاتے ہیں کہ …

» مزید پڑھیں

مینڈک۔۔۔۔۔۔۔۔۔تحریر:۔پیرعثمان خالد

آج شام جب میں نہانے کی غرض سے واش روم گیا تو کیا دیکھا کہ ایک ٹونٹی کھلی ہوئی تھی ،پانی چونکہ ایک نعمت ہے لہذا سوچا کہ اسے بند کردوں ، نہ جانے کون کمبخت ہر روز نل کھلا چھوڑ جاتا ہے ، کل بھی میں نل بند کرنے …

» مزید پڑھیں

فیا ض الحسن کا “فیض” اور معافی پہ معافی۔۔۔۔حیدرمرتضیٰ

وزیر اطلاعات و ثقافت پنجاب محترم فیاض الحسن چوہان کی “شعلہ بیانی” کے تو ہم پہلے ہی معترف تھے لیکن وزارت کا قلمدان سنبھالتے ہی موصوف کی جانب سے جملہ تشبیہات اور استعارات کے استعمال نے ہمارا اُن پر اور اُن کے جوش خطابت پر یقین اور بھی پختہ کر …

» مزید پڑھیں

وزیر اعظم صاحب ہم فٹ پاتھ پر سوتے ہیں۔۔۔۔عثمان خالد

گزشتہ رات میں آفس سے واپس آتے ہوئے سڑک کنارے خراماں خراماں چل رہا تھا ۔ میں جانتا تھا کہ رات کے اس پہر سواری کا ملنا مشکل ہوگا لہذا کسی مر کزی شاہراہ پر رکشہ یا کوئی گاڑی مل جائے گی، چلتے ہوئے میرا دماغ مختلف خیالات کی آماجگاہ …

» مزید پڑھیں

عہد نامۂ جدید، تہتر کا آئین اور ناگزیر تبدیلیاں – محمد اقبال دیوان

میرے وطن، میرے مجبور، تن فگار وطن میں چاہتا ہوں تجھے تیری راہ مل جائے میں نیویارک کا دشمن، نہ ماسکو کا عدو کسے بتاؤں کہ اے میرے سوگوارر وطن کبھی کبھی تجھے، تنہائیوں میں سوچا ہے تو دل کی آنکھ نے روئے ہیں خون کے آنسو (مصطفےٰ زیدی مرحوم …

» مزید پڑھیں

زندہ دلوں کے شہرسے جنت نماوادیوں تک۔۔۔۔خوبصورت سفرنامہ “دعاخان”کے نوک قلم کاشاہکار

ہم سفراپنے ہوں اورمنزل کوئی جنت نماہوتوپھرلمحے ناقابل فراموش بن جاتے ہیں،ایساہی کچھ ہواہے میرے ساتھ بھی جب مجھے اپنوں کیساتھ ناران کاغان جانے کاموقع ملا،آفس سے اجازت،جب سرمناظرنےکہاکہ “نہیں،بالکل بھی نہیں،مگرایک لمحہ سکتے کے بعدکہاجاؤجتنی مرضی ہے چھٹی کرلو”۔۔پھر سفرکی تیاری،رخت سفرباندھنے،زندہ دلوں کے شہرسے وفاقی دارالحکومت کی طرف …

» مزید پڑھیں

میرا جسم، میری مرضی – خدیجہ افضل مبشرہ

سن 2011 میں فرانس سے شروع ہونے والی تنگ نظری کی وباء نے کل اسکینڈینیویا کے ملک ڈنمارک کو بھی اپنی زد میں لے لیا۔ آزاد خیالی اور روشن دماغی کا پرچار کرنے والے بہت سے دوسرے یورپی ممالک کی طرح ڈنمارک بھی مسلمانوں اور اسلام کو بطور خاص ہدف …

» مزید پڑھیں

ذات کی ڈگڈگی – دعا عظیمی

”میرا دل چاہتا ہے مزمل احمد، میں ایسے لفظ تخلیق کروں جو بے حرکت نہ ہوں۔” ہلتے ہوئے جالی کے پردوں کو دیکھتے ہوئے، جھپکتی ہوئی پلکوں کی نوک سے اس نے اپنی انوکھی خواہش کا اظہار کیا۔ ”دعا! تم جو چاہو کر سکتی ہو، تمھارےخیال میں ایک عجیب طاقت …

» مزید پڑھیں