Wednesday , March 20 2019
ہوم > کالم (صفحہ 20)

کالم

گروندر…. جاوید چوہدری

گروندر آئس لینڈ کے دارالحکومت سے 170کلومیٹر کے فاصلے پر ہے‘ مسافر عام حالات میں وہاں اڑھائی گھنٹے میں پہنچتے ہیں لیکن ہمیں پانچ گھنٹے لگ گئے‘ کیوں؟ دو وجوہات تھیں‘ پہلی وجہ برف باری تھی‘ رک یاوک سے گروندر تک ہر چیز برف میں دفن تھی‘ راستے کے گھوڑے …

» مزید پڑھیں

تاریخ کے دفینے سے ابھرتی عورت۔۔۔۔ زاہدہ حنا

1960 کی دہائی سے اور بہ طور خاص جنرل ضیاء الحق کے دور حکومت سے پاکستانی خواتین اپنے حقوق کے لیے جدوجہد میں مصروف ہیں۔ روز بہ روز ایسی خواتین اور مردوں کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے جو سیاسی معاشرتی اور دینی معاملات کو عقل کی روشنی میں دیکھتے …

» مزید پڑھیں

بسنت کے لیے بسنتا لاہور۔۔محمد جابروقاص

آج اتوار کا دن تھا اور بہت عرصے بعد دفتر سے جلد گھر کی راہ لی۔ آتے ہی چھت کی طرف پاؤں آٹھ گئے۔ امید تھی کہ کچھ دھوپ باقی بچی ہو گی۔ مگر اوپر پہنچنے کے بعد جیسے ہی سورج کی طرف منہ کیا اس نے اپنی دم توڑتی …

» مزید پڑھیں

یوم کشمیر۔۔۔۔ مقتدا منصور

آج پورے ملک میں یوم کشمیر کے سلسلے میں تعطیل ہے۔ کیوں تعطیل ہے؟ بیشتر لوگوں کو اس کا علم ہی نہیں۔ کشمیری عوام کے کیا مسائل ہیں؟ زیادہ تر لوگ اس سے نابلد ہیں۔ بس یہ معلوم ہے کہ اس دن کشمیری عوام سے یکجہتی کی خاطر چھٹی ملتی …

» مزید پڑھیں

سوچ بچار اچھی چیز نہیں….وسعت اللہ خان

بچے والدین سے سیکھتے ہیں اور عوام ریاست سے۔ اگر ریاست قانون و اصول پسند ہو تو اپنے بچوں کو بھی اصول و قانون اپنانے پر آمادہ کرسکتی ہے۔لیکن ریاستی ادارے اگر ایک طرف قانون و اصول کی حکمرانی پر عمل کم اور اس کی اہمیت کے بارے میں زبانی جمع خرچ …

» مزید پڑھیں

روائتی صحافت اور صحافتی طرفین!شیخ خالد زاہد

تمام ادارے منافع بخش اور قدرے ہموارسمتوں کا تعین کرتے ہیں یہ ادارے اجتماعی سطح پر بھی اس بات کا خیال رکھتے ہیں کہ ان کے مفادات سے کوئی نا ٹکرائے اور کسی قسم کا نقصان پہنچانے کی کوشش نا کرے اسی طرح اگر کوئی اپنی ہی نوعیت کا ادارہ …

» مزید پڑھیں

خادم اعلیٰ کے لیے تالیاں… جاوید چوہدری

کہانی کا آخری حصہ 2014ء میں لکھا گیا‘ نومبر 2014ء میں انٹرنیشنل اخبارات میں خبر شایع ہوئی ’’دنیا کے ایک نامور سائنس دان مالی مجبوریوں کی وجہ سے اپنا نوبل انعام فروخت کرنا چاہتے ہیں‘‘ یہ خبر حیران کن تھی‘ دنیا میں کسی نے کبھی نوبل انعام فروخت نہیں کیا …

» مزید پڑھیں

سیاسی لب ولہجہ کا کلچر… سلمان عابد

پاکستان کی جمہوری سیاست ابھی اپنے ابتدائی ارتقائی عمل سے گزر رہی ہے اس لیے اہل دانش بنیادی نوعیت کے سوالات اٹھاتے ہیں۔ کیونکہ اہل سیاست سمیت سیاسی جماعتوں کی قیادت کو داخلی اور خارجی محاذ پر تعمیری سیاست کے تناظر میں جو کردار ادا کرنا چاہیے تھا، اس کا …

» مزید پڑھیں

ڈاکٹر شاہد مسعود اور وفاقی تحقیقاتی ادارہ…امتیاز احمد شاد

قصور میں ہونے والے واقعات نے ریاست کے انتظامی ڈھانچہ کی جڑ ےں ہلا کر رکھ دی ہیں۔بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی اور پھر ان کا قتل ایک معمہ بن کر رہ گیا ہے۔اس دردناک عمل کی لپیٹ میں ملک کا ہر صوبہ آچکا ہے۔ روزانہ کہیں نہ کہیں سے …

» مزید پڑھیں

عمران خان اور بہترین پولیس کا تصوّر …..ذوالفقار احمد چیمہ

یہ جان کر افسوس ہوتا ہے کہ ہمارے قومی راہنما ملک کے اہم ترین اداروں کے سسٹم، طریقۂ کار، ان کی خامیوں اور اصلاح کے لیے ضروری اقدامات سے یا تو بالکل نابلد ہیں یا ان کا علم بالکل سطحی نوعیّت کا ہے۔ کئی سال سب سے بڑے صوبے کے …

» مزید پڑھیں