Tuesday , March 26 2019
ہوم > پاکستان > افسوسناک سانحے کے بعد نیوزی لینڈ کی دبنگ وزیراعظم خود میدان میں آترآئیں ۔۔ دہشتگردی کے خلاف ایسی فیصلہ کن جنگ کا اعلان کر دیاکہ روس اورامریکہ سمیت تمام ممالک منہ دیکھتے رہ گئے

افسوسناک سانحے کے بعد نیوزی لینڈ کی دبنگ وزیراعظم خود میدان میں آترآئیں ۔۔ دہشتگردی کے خلاف ایسی فیصلہ کن جنگ کا اعلان کر دیاکہ روس اورامریکہ سمیت تمام ممالک منہ دیکھتے رہ گئے

ویلنگٹن (ویب ڈیسک) نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈاآرڈرن نے کرائسٹ چرچ میں 2 مساجد پر حملے کو بدترین دہشتگردی قرار دیتے ہوئے ملک میں اسلحہ قوانین تبدیل کرنے کا اعلان کر دیا، نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم کی جانب سے کرائسٹ چرچ کی مساجد میں مشین گنوں سے خون کی ہولی کھیلنے والے

کی ایک بار پھر مذمت کی گئی اور کہا حملہ آور کے پاس لائسنس یافتہ اسلحہ تھا ، اسلئےاسلحے سے متعلق قوانین بدل دیئے جائیں گے۔وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا حملوں میں شہید تمام افراد کا تعلق مسلم ممالک بشمول پاکستان، ترکی، سعودی عرب ، انڈونیشیا اور ملائشیا سے تھا اور وہ مذکورہ تمام ممالک سے رابطے میں ہیں، وزیراعظم نے بتایا کہ کرائسٹ چرچ مساجد میں حملہ کرنے والا کئی ممالک کا سفر کر چکا ہے اور وہ نیوزی لینڈ کا مستقل رہائشی نہیں بلکہ آسٹریلیا کا شہری ہے اور نیوزی لینڈ آتا جاتا رہتا تھا، دوسری جانب شہر کی میئر لیانےڈیلزل کہتی ہیں بدترین قتل عام پر شہر سکتے کی کیفیت میں ہے۔ شہدا کی تدفین کا سلسلہ آج سے شروع کیا جائے گا۔ انہوں نے اپیل کی کہ عوام نفرت کی آواز کو ہمدردی اورمہربانی سے بدل دیں، یاد رہے کہ گزشتہ روز ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا ، یوزی لینڈ کی دو مساجد میں دہشتگرد حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں خواتین و بچوں سمیت 49 افراد جاں بحق اور 20 کے قریب افراد زخمی ہوئے، واقعے کے وقت علاقے میں موجود بنگلہ دیشی کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی محفوظ رہے، اطلاعات کے مطابق نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں واقع دو مساجد پر مسلح دہشتگردوں نے حملہ کیا، جمعے کا دن ہونے کی وجہ سے مساجد میں معمول سے زیادہ لوگ موجود تھے، جن مساجد پر حملے کیے گئے ان میں سے ایک وسطی کرائسٹ چرچ میں واقع مسجد النور

اور دوسری مسجد نواحی علاقے لِن ووڈ میں ہے۔ النور مسجد میں 41 اور لِن ووڈ مسجد میں 8 افراد جاں بحق ہوئے، مرکزی حملہ آو کی شناخت 28 سالہ برینٹن ٹیرنٹ کے نام سے ہوئی ہے اور وہ آسٹریلوی شہری ہے جس کی تصدیق آسٹریلوی حکومت نے کردی ہے، پاکستان کے دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ مساجد میں ہونے والے دہشت گرد حملوں میں 4 پاکستانی زخمی ہوئے ہیں جب کہ 5 تاحال لاپتہ ہیں،نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن نے مساجد پر حملے کو دہشتگردی اور نیوزی لینڈ کی تاریخ کا سیاہ ترین دن قرار دیا ہے،وزیراعظم جسینڈا آرڈرن نے کہا آج کا دن نیوزی لینڈ کی تاریخ کا سیاہ ترین دن ہے، اس عزم کا اظہار کرتے ہیں کہ ذمہ داروں کو قانون کے کٹہرے میں لایا جائے گا، ۔اس شخص کی مزید تفصیلات نہیں بتائی گئیں، پولیس کمشنر مائیک بش نے بتایا کہ حراست میں لیے گئے افراد کے قبضے سے اسلحہ اور دھماکہ خیز مواد برآمد ہوا ہے، واقعے کے بعد نیوزی لینڈ میں سوگ کا ماحول ہے اور قومی پرچم سرنگوں کردیا گیا ہے، کرائسٹ چرچ میں مقامی وقت کے مطابق تقریباً ڈیڑھ سے 2 بجے کے درمیان دونوں مساجد میں فائرنگ کے واقعات پیش آئے اور ان میں سے ایک مسجد میں بنگلادیش کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی بھی نماز جمعہ کی ادائیگی کے لیے پہنچے تھے تاہم واقعے کے وقت وہ مسجد کے اندر نہیں تھے، اور اب نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈاآرڈرن نے کرائسٹ چرچ میں 2 مساجد پر حملے کو بدترین دہشتگردی قرار دیتے ہوئے ملک میں اسلحہ قوانین تبدیل کرنے کا اعلان کر دیا ہے ،

یہ بھی دیکھیں

بریکنگ نیوز:اسلام آباد کے بڑے نجی سکول میں دہشتگردوں کی فائرنگ ۔۔۔ تشویشناک اطلاعات موصول

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) سیکٹر جی ایٹ میں سکول کے باہر فائرنگ کا واقعہ …