Saturday , May 25 2019
ہوم > پاکستان > نیوزی لینڈ میں تو جو ہونا تھا وہ ہوگیا ،مگراب پوری دنیا میں کیا خطرناک کارروائیاں ڈلنے والی ہیں ؟ سینئر صحافی نے بڑی بریکنگ نیوز دے دی

نیوزی لینڈ میں تو جو ہونا تھا وہ ہوگیا ،مگراب پوری دنیا میں کیا خطرناک کارروائیاں ڈلنے والی ہیں ؟ سینئر صحافی نے بڑی بریکنگ نیوز دے دی

لاہور (ویب ڈیسک) سینئر تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود نے کہا ہے کہ نیوزی لینڈ سانحے کے بعد دنیا ایک بہت بڑے خطرے کیلئے تیار ہوجائے، مسلمانوں کے ساتھ جو ہونا ہے وہ ہوگا، لیکن باقی بھی تیار ہوجائیں،کیونکہ قاتل کا آئیڈیل ڈونلڈ ٹرمپ ہے،جو کہ سفید فام ہے،قاتل نے 74صفحات

کے اپنے منشور بھی شائع کیا ۔ انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ نیا ایک بہت بڑے خطرے کیلئے تیار ہوجائے، نیوزی لینڈ حملے کے قاتل نے 74صفحات کا جو اپنا منشور شائع کیا ہے، اس قاتل کا آئیڈیل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ ہے۔مجھ سے کیا پوچھوگے ؟ کیا ٹرمپ کو تم مانتے ہو یا نہیں؟ میں کہوں گا کہ ٹرمپ ہی سفید فام نسل کے اصل ہیرو ہیں۔اس لیے سفیدفام نسل ہی دنیا میں رہنے کی اصل حق دار ہے، انہوں نے کہا کہ اگر آپ بہت بڑے عہدے پر ہیں تو پھر الفاظ بہت زیادہ اہمیت رکھتے ہیں، یہ سفید فام طبقہ جو ڈونلڈ ٹرمپ کو ہیرو سمجھتا ہے ، ڈونلڈ ٹرمپ جو مرضی کریں ،ایٹم بم چلا دیں، بس وہ ان کے پیروکار ہی رہیں گے۔ڈاکٹر شاہد مسعود نے بتایا کہ سفید فام وہ لوگ نہیں جو گورے ہوتے ہیں۔ 1916ء میں میڈیسن گرانٹ ایک بندہ تھا جس نے کتاب ”دی پاسنگ آف گریٹ ریس“ لکھی تھی۔اس کتاب میں یہ بندہ لکھتا ہے کہ دنیا میں صرف سفید فام نسل کو اجازت ہے کہ وہ حکمران بنیں، سفید فام نسل کے لوگ کسی ہندو، سیاہ فام ، یہودی سے یا کسی بھی دوسری نسل یا ملک کے لوگوں شادی کرلیں اور پھر ان سے جو نسل پیدا ہوگی، وہ بھی سفید فام نسل کو قابل قبول نہیں ہے۔سفید فام نسل کو دنیا میں کسی دوسری نسل کے ساتھ شادی نہیں کرنی چاہیے ، خون میں ملاوٹ نہیں کرنی چاہیے ہے ،

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم ہاوٴس کے اندر نواز شریف کے مخبر موجود ہونے کا انکشاف ۔۔۔۔ ایک خبر نے ہر طرف ہلچل مچا دی

لاہور (ویب ڈیسک) سینئیر صحافی ڈاکٹر شاہد مسعود کا کہنا ہے کہ ایک بات میں …